رسائی کے لنکس

logo-print

کمبوڈیا میں قتل عام کے جرم میں سابق رہنما کو 19 سال قید


کمبوڈیا میں اقوام متحدہ کی حمایت یافتہ جنگی جرائم کی ایک خصوصی عدالت نے کمیونسٹ پارٹی کے ایک سابق رہنما کو انسانیت کے خلاف جرائم کا مرتکب قرار دیتے ہوئے ان کو 19 سال قید کی سزا سنائی ہے۔

کائنگ گیوک اِیو (Kaing Guek Eav) عرف ڈچ سابق جیل کمانڈر ہیں اور ان کا تعلق کمیونسٹ پارٹی آف کیمپوچیا کے حمایتی گروپ خیمر روج سے رہا ہے۔

استغاثہ نے ڈچ کے لیے 40 سال قید کا مطالبہ کیا تھا لیکن عدالت نے ان کو 35 سال قید کی سزا سنائی جس کو مزید کم کرکے 19 برس کر دیا گیا۔ سزا میں نرمی کی وجوہات ڈچ کی جانب سے اپنے اقدامات پر افسوس کا اظہار، عدالت سے تعاون اور حراست میں گزارا گیا وقت بتائی جاتی ہیں۔

ان کو یہ سزا تین دہائیوں قبل تشدد کے نتیجے میں کم از کم 14 ہزار افراد کی ہلاکت میں اہم کردار ادا کرنے کے جرم میں سنائی گئی ہے۔

خصوصی عدالت نے جب اپنا یہ پہلا فیصلہ سنایا تو اس وقت کمرہ عدالت کے باہر متاثرین کی ایک بڑی تعداد موجود تھی۔

ڈچ خیمر روج کے پانچ سینئر رہنماؤں میں سے پہلے رہنما ہیں جن پر 70 کی دہائی میں ہونے والی نسل کشی کے جرم میں مقدمہ چلایا گیا ہے۔

واضح رہے کہ 17 لاکھ سے زائد افراد، جو کہ کمبوڈیا کی کل آبادی کا ایک چوتھائی حصہ تھے، بھوک، بیماری، تشدد اور قاتلانہ حملوں سے ہلاک ہو گئے تھے۔

XS
SM
MD
LG