رسائی کے لنکس

logo-print

امریکی کانگریس کو دھمکی آمیز خطوط موصول


امریکی کانگریس کو دھمکی آمیز خطوط موصول

سینیٹ کے حفاظتی امور کے نگران نے کانگریس کے تمام دفاتر پر زور دیا ہے کہ وہ ان دھمکی آمیز خطوط کو سنجیدہ سمجھیں اور موصولہ ڈاک دیکھتے وقت انتہائی محتاط رہیں

امریکی کانگریس کے کئی دفاتر کو مشتبہ پائوڈر سے آلودہ دھمکی آمیز خطوط موصول ہونے کے بعد قانون نافذ کرنے والے وفاقی اداروں نے حکام کو انتہائی محتاط رہنے کی ہدایت کی ہے۔

امریکی سینیٹ کے سارجنٹ ایٹ آرمز ٹیرنس گینر کا کہنا ہے کہ خط بھیجنے والے "انتہائی منظم اور مربوط ہیں اور اس کاروائی کے نتیجے میں کوئی نقصان ہونے کا خطرہ انتہائی حقیقی ہے"۔

سینیٹ کے حفاظتی امور کے نگران نے کانگریس کے تمام دفاتر پر زور دیا ہے کہ وہ ان دھمکی آمیز خطوط کو سنجیدہ سمجھیں اور موصولہ ڈاک دیکھتے وقت انتہائی محتاط رہیں۔

گینر نے جمعرات کو صحافیوں کو بتایا کہ سینیٹ کے مزید دفاتر کو بھی اس نوعیت کے خطوط موصول ہوئے ہیں۔ اس سے قبل تین اراکینِ کانگریس کو بھی دھمکی آمیز خطوط مل چکے ہیں۔

لیکن عہدیدار نے بتایا کہ تاحال کوئی بھی موصولہ خط ضرر رساں ثابت نہیں ہوا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے بھی امریکی تحقیقاتی اداروں نے دارالحکومت واشنگٹن سے ایک شخص کو گرفتار کیا تھا جس پر کانگریس کی عمارت 'کیپٹل ہِل' میں بم نصب کرنے کی منصوبہ بندی کا الزام ہے۔

اس سے قبل 2001ء میں 11 ستمبر کے دہشت گرد حملوں کے بعد امریکی ذرائع ابلاغ اور کانگریس کے کئی دفاتر کو خطوط کے ذریعے 'اینتھریکس' نامی زہریلا مواد ارسال کیا گیا تھا جس سے پانچ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

XS
SM
MD
LG