رسائی کے لنکس

logo-print

کرونا وائرس نے بے گھر افراد کی بھوک میں بھی اضافہ کر دیا


Homeless and coronavirus

ایک ایسے وقت میں جب واشنگٹن ڈی سی کے ریسٹورینٹس اور بیکریز، کرونا وائرس کی وجہ سے گاہکوں کے لئے بند ہیں، ایک حلال ریستوران بدستور کھلا ہوا ہے۔ اپنے ان گاہکوں کے لئے جن کا کوئی گھر نہیں ہے اور نہ ہی کھانے پینے کا کوئی وسیلہ ہے۔ یہ ریستوران انہیں مفت کھانا فراہم کرتا ہے 'بلا امتیاز مذہب اور رنگ و نسل'۔

یہ بات سہیل قاضی نے بتائی جو منگل کی شام کو کھانوں کے ڈبے لے کر ایک قریبی پارک میں گئے تھے، تاکہ وہاں رہنے والے ان درجنوں بے گھر افراد کا پیٹ بھر سکیں جن کے پاس کوئی اور وسیلہ نہیں ہے۔

انھوں نے بتایا کہ ویسے تو ان کا ریستوراں دو ہزار تیرہ سے ہزاروں کھانے تقسیم کر چکا ہے لیکن اس وقت ایسا کرنا اس لئے ضروری ہے کیونکہ جیسا کسی بھی بڑی آفت یا وبا کے وقت ہوتا ہے کہ ہر ایک کو اپنی اپنی پڑ جاتی ہے۔ اب ان میں سے بہت سوں کو نہیں پتہ کہ انہیں کہاں سے کھانا مل سکتا ہے۔ اسی لئے میں خود یہاں آ یا ہوں۔

منان قاضی اور ان کے چھوٹے بھائی سہیل قاضی جانتے ہیں کہ بھوک کیا ہوتی ہے، کیونکہ ان کا تعلق پاکستان کے شہر جہلم کے ایک ایسے مفلس گھرانے سے ہے جس میں نو بہن بھائی تھے۔ گزارہ مشکل سے ہوتا تھا۔ جب ان کی زندگی میں آسودگی آئی تو وہ اسے اللہ کا انعام سمجھ کر دوسرے انسانوں کو بھی شریک کرنا چاہتے ہیں۔

سہیل قاضی کے ساتھ شہناز عزیز کی بات چیت سننے کے لیے لنک پر کلک کیجیے:

کرونا وائرس اور ہوم لیس یا لوگ
please wait

No media source currently available

0:00 0:05:28 0:00


XS
SM
MD
LG