رسائی کے لنکس

بھارت کو سی 17 ٹرانسپورٹ طیارے اور حربی آلات کی مجوزہ فروخت


فائل

ڈفنس سکیورٹی کوپریشن ایجنسی (ڈی ایس سی اے) کے بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت اِن دِنوں سی 17 طیارہ استعمال کرتا ہے، اور درکار آلات کی فراہمی سے وہ اِن طیاروں کو اپنی مسلح افواج کے زیر استعمال لا سکتا ہے۔ اعلان میں کہا گیا ہے کہ اِن آلات کی فروخت سے خطے میں بنیادی فوجی توازن پر کوئی اثر نہیں پڑے گا

امریکی محکمہٴ خارجہ کے اعلان میں کہا گیا ہے کہ بھارت کو 36 کروڑ 62 لاکھ ڈالر مالیت کے سی 17 ٹرانسپورٹ طیارے فروخت کیے جائیں گے۔

پیر کے روز کیے گئے اس اعلان میں بتایا گیا ہے کہ حکومتِ بھارت کے ساتھ اس ممکنہ دفاعی سودے کے بارے میں کانگریس کو مطلع کیا جا رہا ہے، جسے دفاعی سلامتی کے تعاون کے ادارے (ڈی ایس سی اے) نے طے کیا ہے۔

اعلان میں کہا گیا ہے کہ اِن آلات میں:’’ایک عدد اے این/اے اے آرٴ47 میزائل وارننگ سسٹم؛ ایک عدد اے این/اے ایل اِی کاؤنٹر میئرز ڈسپینسنگ سسٹم؛ ایک عدد اے این/اے پی ایکس 119 آڈینٹی فیکیشن فرینڈ اور فو (آئی ایف ایف) ٹرانسپونڈر، پریسئن نیویگیشن اکپمنٹ، اسپیر اینڈرپیئر پارٹس، مین ٹننس، سپورٹ اینڈ اکوپمنمٹ‘‘ شامل ہے؛ جن کی مجموعی مالیت 36 کروڑ اور 62 لاکھ ڈالر ہوگی۔

ڈفنس سکیورٹی کوپریشن ایجنسی (ڈی ایس سی اے) کے اعلان میں مزید کہا گیا ہے کہ اس مجوزہ فروخت سے خارجہ پالیسی اور امریکی قومی سلامتی میں مدد ملے گی؛ جس سے امریکہ بھارت تعلقات مضبوط ہوں گے؛ اور امریکہ کے ایک اہم پارٹنر کی سکیورٹی میں خاطر خواہ بہتری آئے گی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ ’’جنوبی ایشیا میں معاشی فروغ اور استحکام کے حوالے، بھارت امریکہ کا ایک اہم ساتھی ہے‘‘۔

ادارے نے کہا ہے کہ مجوزہ فروخت کے نتیجے میں بھارت کی حکمتِ عملی کی حامل موجودہ اور مستقبل کی فضائی نقل و حمل کی ضروریات پوری ہوں گی۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت اِن دِنوں سی 17 طیارہ استعمال کرتا ہے، اور درکار آلات کی فراہمی سے وہ اِن طیاروں کو اپنی مسلح افواج کے زیر استعمال لا سکتا ہے۔

اعلان میں کہا گیا ہے کہ اِن آلات کی فروخت سے خطے میں بنیادی فوجی توازن پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG