رسائی کے لنکس

logo-print

فیصل شہزاد کے خلاف دس الزامات پر مبنی فردِ جرم عائد


اِن میں وسیع تباہی پھیلانے والے ہتھیار کے استعمال کی کوشش اور دہشت گردی اور ہتھیاروں سے متعلق متعدد الزامات شامل ہیں

امریکی محکمہٴ انصاف نے کہا ہے کہ ایک فیڈرل گرینڈ جیوری نے ٹائمزاسکوائر میں بم دھماکہ کرنے کے ملزم فیصل شہزاد کے خلاف گذشتہ ماہ نیویارک شہر میں کار بم کا ناکام دھماکہ کرنے کے حوالے سے دس الزامات پر مبنی فردِ جرم فائل کی ہے۔

جمعرات کو پیش کی جانے والی فردِ جرم شہزاد کے خلاف ابتدائی مقدمے میں پانچ الزامات کا اضافہ کرتی ہے۔

اِن میں وسیع تباہی پھیلانے والے ہتھیار کے استعمال کی کوشش اور دہشت گردی اور ہتھیاروں سے متعلق متعدد الزامات شامل ہیں۔

جرم ثابت ہونے کی صورت میں اُسے عمر قید کا سامنا ہوسکتا ہے۔

تیس سالہ پاکستانی نژاد امریکہ شہری، فیصل شہزاد کو تین مئی کو حراست میں لیا گیا تھا اور قانون نافذ کرنے والے ایجنٹوں نے اُنھیں ایک ایسی گاڑی سے منسلک کیا تھا جو ایک کروڈ بم کے ساتھ ٹائمز اسکوائر میں پارک کی گئی تھی۔

فیصل کو تلاش کرکے ایک طیارے سے اتارا گیا جو نیو یارک سے دوبئی پرواز کرنے والا تھا۔

اِس فرد جرم میں یہ الزام عائد کیا گیا ہے کہ شہزاد نے دھماکہ خیز مادوں کی تربیت پاکستانی طالبان سے وزیرستان کے علاقے میں حاصل کی تھی۔

شہزاد کو 21جون کو نیویارک کی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

XS
SM
MD
LG