رسائی کے لنکس

logo-print

حافظ سعید کی امدادی تنظیم کے خلاف پہلی ایف آئی آر درج


فلاح انسانیت فاؤنڈیشن پاکستان میں امدادی کارروائیوں میں حصہ لیتی رہی ہے اور جماعت الدعوۃ پر پابندی کے باوجود یہ تنظیم آزادانہ طور پر ملک بھر میں کام کررہی ہے

پاکستان میں حکومت نے جماعت الدعوۃ پاکستان کے حافظ سعید کی فلاحی تنظیم فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے خلاف عملی کارروائی کرتے ہوئے چندہ مانگنے پر مقدمہ درج کرلیا ہے۔

یہ مقدمہ اسلام آباد کے تھانہ کورال میں جماعت الدعوة کی ذیلی تنظیم فلاح انسانیت کے خلاف درج ہوا۔

فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے خلاف ایف آئی آر درج
فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے خلاف ایف آئی آر درج

ایف آئی آر میں کہا گیا کہ پولیس اہلکاروں کو مخبر کے ذریعے اطلاع ملی کہ غوری ٹاؤن کے علاقہ میں ایک مسجد آل سلمان کی بیرونی دیوار پر ایک بینر آویزاں ہے جس میں برما، غزہ اور شام کے مسلمانوں کے لیے سردی میں امداد فراہم کرنے کے لیے مدد کی درخواست کی گئی تھی۔ اس پر پولیس نے بینر قبضہ میں لے لیا اور نامعلوم افراد کے خلاف دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر دفعہ 188 کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا۔

فلاح انسانیت فاؤنڈیشن پاکستان میں امدادی کارروائیوں میں حصہ لیتی رہی ہے اور جماعت الدعوۃ پر پابندی کے باوجود یہ تنظیم آزادانہ طور پر ملک بھر میں کام کررہی ہے اور اسے کسی مشکل کا سامنا نہیں کرنا پڑا۔

حافظ سعید کا نام عالمی دہشت گردوں کی فہرست میں آنے کے بعد اور حالیہ دنوں میں اس جماعت کا سیاسی ونگ ملی مسلم لیگ کے نام سے بننے کے بعد اسکے خلاف ملک کے اندر کارروائیوں کا آغاز ہوا ہے اور کہا جارہا ہے کہ آئندہ چند روز میں فلاح انسانیت فاؤنڈیشن کے تمام فلاحی منصوبے حکومتی کنٹرول میں لے لئے جائیں گے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG