رسائی کے لنکس

logo-print

ہوائی میں آتش فشاں پھٹ گیا، رہائشیوں کو انخلا کا حکم


آتش فشاں پھٹنے کے بعد ہوائی کے گورنر نے علاقے سے رہائشیوں کے انخلا اور خالی ہونے والے گھروں کی حفاظت کے لیے نیشنل گارڈ کے دستے طلب کرلیے ہیں۔

امریکہ کی ریاست ہوائی میں ایک آتش فشاں پہاڑ پھٹنے کے بعد لگ بھگ 1800 رہائشیوں کو علاقے سے انخلا کا حکم دے دیا گیا ہے۔

حکام کے مطابق ہوائی کے کیلاوییا نامی آتش فشاں نے جمعرات کو لاوا اگلنا شروع کیا تھا۔ آتش فشاں کے پھٹنے سے چند گھنٹے قبل ہوائی میں زلزلے کے جھٹکے بھی محسوس کیے گئے تھے جن کی شدت ریکٹر اسکیل پر 5 ریکارڈ کی گئی۔

آتش فشاں پھٹنے کے بعد ہوائی کے گورنر نے علاقے سے رہائشیوں کے انخلا اور خالی ہونے والے گھروں کی حفاظت کے لیے نیشنل گارڈ کے دستے طلب کرلیے ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ ابتدائی طور پر آتش فشاں پہاڑ کے نزدیک واقع 770 گھروں کے مکینوں کو علاقے سے نکل جانے کا حکم دیا گیا ہے جنہیں سرکاری پناہ گاہوں میں منتقل کیا جارہا ہے۔

حکام نے خبردار کیا ہے کہ اگر لاوا نکلنے کا سلسلہ جاری رہا تو مزید آبادیوں کو خالی کرایا جاسکتا ہے۔

پہاڑ سے نکلنے والا لاوا نزدیکی جنگلات میں بھی گرا ہے جہاں اس سے آگ لگ گئی ہے۔

امریکی ارضیاتی سروے کے ماہرین کا کہناہے کہ تاحال یہ یقین سے بتانا ممکن نہیں کہ آتش فشاں کے لاوا اگلنے کا سلسلہ کب تک جاری رہے گا۔

ارضیاتی سروے کے ماہرین کا کہنا ہے کہ جمعرات کی سہ پہر آتش فشاں پہاڑ کے نیچے کئی دراڑیں دریافت ہوئی ہیں جن سے لاوا نکلنا شروع ہوگیا ہے۔ سائنس دانوں کا کہنا ہے کہ پہاڑ میں مزید دراڑیں پڑ سکتی ہیں جہاں سے لاوا نکلے گا لیکن ان کے مقامات کا پیشگی تعین ممکن نہیں۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG