رسائی کے لنکس

logo-print

بھارتی وزیر اعظم کا اپنے اقتصادی اصلاحات کے پروگرام کا دفاع


بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ

مالیاتی خسارہ پورا کرنے کے لیے حکومت پر اپنے اخراجات گھٹانے اور سب سڈی کے خاتمے جیسے اقدامات کرنے کے لیے شدید دباؤ ہے جن میں ایندھن کی قیمتوں کی سب سڈی بھی شامل ہے

بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ نے اپنی اقتصادی اصلاحات کا دفاع کرتے ہوئے کہاہے کہ اس سے ملک کا مالیاتی خسارہ کم ہوگا اور یہ جنوبی ایشیائی ملک غیر ملکی سرمایہ کاروں کے لیے مزید پرکشش بن جائے گا۔

مسٹر سنگھ نے ہفتے کے روز ملک میں ڈیزل آئل کی قیمتوں میں تقریباً 12 فی صد اضافے کے سرکاری فیصلے کی حمایت کی۔

انہوں نے جمعرات کو اپنی کابینہ کے اجلاس میں ڈیزل کی قیمت میں ایک سینٹ فی لٹر کے لگ بھگ اضافے کی منظوری دی تھی، جس کے نتیجے میں ان کی بعض اتحادی جماعتوں اور حزب اختلاف کی پارٹیوں کی جانب سے شدید ردعمل سامنے آیا۔

جمعے کہ بھارتی حکومت نے ریٹل کی بڑی کمپنیوں کو ملک میں اپنے اسٹور قائم کرنے اور کاروبار کرنے کی اجازت دینے کا اعلان کیا تھا جس پر حزب اختلاف نے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہاتھا اس سے چھوٹے دکانداروں پر کاری ضرب لگے گی اور اس شعبے سے وابستہ بہت سے لوگ اپنے روزگار اور ملازمتیں کھو بیٹھیں گے۔

بھارت کی معاشی ترقی کی رفتار سست پڑرہی ہے اور افراط زر کی شرح میں اضافے اور ملک کی کریڈٹ ریٹنگ میں کمی کے خدشات مسلسل بڑھ رہے ہیں۔

مالیاتی خسارہ پورا کرنے کے لیے حکومت پر اپنے اخراجات گھٹانے اور سب سڈی ختم کے خاتمے جیسے اقدامات کرنے کے لیے شدید دباؤ ہے جس میں ایندھن کی قیمتوں کی سب سڈی بھی شامل ہے۔
XS
SM
MD
LG