رسائی کے لنکس

logo-print

بھارت اور پاکستان کے مابین دو روزہ مذاکرات کا آغاز پیر سے


بھارت اور پاکستان کے مابین دو روزہ مذاکرات کا آغاز پیر سے

بھارت اور پاکستان کے داخلہ سکریٹریوں کے مابین دو روزہ مذاکرات پیر کے روز سے نئی دہلی میں شروع ہو رہے ہیں۔یہ مذاکرات مہالی میں دونوں ملکوں کے درمیان ہونے والے کرکٹ مقابلے کے تناظر میں سربراہ ملاقات سے قبل ہوں گے۔

توقع ہے کہ دہشت گردی ، دونوں ملکوں کی طرف سے پکڑے گئے ماہی گیروں اور قیدیوں کے تبادلے، منشیات کی اسمگلنگ، جعلی کرنسی اور ویزا قوانین میں نرمی جیسے معاملات مذاکرات میں چھائے رہیں گے۔

بھارت کی جانب سے جہاں سرحد پار کے مبینہ دہشت گرد کیمپوں کے خاتمے، ممبئی دہشت گرد حملوں کے منصوبہ سازوں کی آوازوں کے نمونوں کی فراہمی اور ممبئی حملوں کی تحقیقات میں پیش رفت جیسے معاملات کے اُٹھائے جانےکی توقع ہے، وہیں پاکستان کی جانب سے سمجھوتا ایکسپریس دھماکوٕں کی تحقیقات میں پیش رفت سمیت متعدد معاملات کے اُٹھائے جانے کا امکان ہے۔

سمجھوتا ایکسپریس دھماکوں میں ہندتوا نواز انتہا پسند گروپوں کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔اِن دھماکوں میں 66افراد ہلاک ہوئے تھے جِن میں سے بیشتر پاکستانی باشندے تھے۔

مذاکرات میں بھارت کی طرف سے سکریٹری داخلہ جی کے پلئی اور پاکستان کی جانب سے اُن کے ہم منصب چودھری قمر زماں قیادت کریں گے۔

بھارت اور پاکستان کی جانب سے دو طرفہ مذاکرات کو بحال کرنے کے فیصلے کے بعد دونوں ملکوں کے مابین سکریٹری داخلہ سطح کی یہ پہلی بات چیت ہوگی۔ اِس کے بعد، دونوں ملکوں کے کامرس اور آبی وسائل کے سکریٹریوں کے مابین مذاکرات کی توقع ہے۔

XS
SM
MD
LG