رسائی کے لنکس

logo-print

بھارتی کشمیر میں انسانی حقوق کے سرگرم کارکن کی گرفتاری


بھارتی کشمیر میں انسانی حقوق کے سرگرم کارکن کی گرفتاری

کشمیر کے بھارتی کنٹرول کے علاقے میں پولیس نے انسانی حقوق کے ایک سرگرم کارکن کو اس لیے گرفتار کرلیا ہے کہ اُس نے پاکستان میں مقیم باغی لیڈروں کو ٹیلی فون پر ایک سیمینار میں شریک ہونے کی دعوت دی تھی۔

احسن اَنتو کو بدھ کے روز متنازع علاقے کے سب سے بڑے شہر سری نگر میں گرفتار کیا گیا۔پولیس نے اُس ہوٹل پر بھی چھاپہ مارا جہاں سیمی نار ہونے والا تھا اور جاوید میر کو گرفتار کرلیا ۔ وہ علحدگی پسند تنظیم جموں و کشمیر محاذِ آزادی کے ایک عہدے دار ہیں۔

کشمیر بھارت اور پاکستان کے درمیان بٹا ہوا ہے ، لیکن دونوں ملک پورے علاقے کے دعوے دار ہیں۔

علحدگی پسند مسلمانوں کی مختلف تنظیمیں بھارت سے آزادی یا مسلم اکثریت کے پاکستان کے ساتھ الحاق کے لیے دو عشروں سے لڑ رہی ہیں۔ اس بغاوت میں 47 ہزار سے زیادہ لوگ ہلاک ہوچکے ہیں۔

XS
SM
MD
LG