رسائی کے لنکس

logo-print

یورپی یونین کی نئی پابندیوں کی مذمت


ترجمان ایرانی وزارت خارجہ رامین مہمان پرست

ایران نے یورپی یونین کی طرف سے تیل کی خریداری پر عائد نئی پابندیوں اور اس کے مرکزی بینک کے اثاثے منجمد کرنے کے فیصلے کی مذمت کرتے ہوئے ان اقدامات کو ’’غیر منطقی اور غیر منصفانہ‘‘ قرار دیا ہے۔

ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان رامین مہمان پرست نے کہا کہ ان کے ملک کے پاس تیل اور گیس کے وسیع ذخائر ہیں اور دنیا کو درکار توانائی کے پیش نظر’’یہ ممکن نہیں کہ ایران پر پابندیاں عائد کی جائیں‘‘۔

ایران کے سینئر قانون سازوں نے یورپی یونین کی نئی پابندیوں پر ردعمل کے اظہار میں آبنائے ہرمز کو بند کرنے کی دھمکی کو دہرایا ہے۔ یہ آبی گزرگاہ عالمی سطح پر تیل کی نقل وحمل کا اہم راستہ ہے۔

یورپی یونین نے پیر کو برسلز میں ہونے والے اجلاس میں ایران پر نئی پابندیوں پر اتفاق کیا تھا۔ یہ اقدام مغربی طاقتوں کے اس دباؤ کا حصہ ہے جو وہ ایران کو اپنا جوہری پروگرام ترک کرنے کے لیے ڈال رہی ہیں۔

امریکہ اور مغربی طاقتوں کا اصرار ہے کہ ایران جوہری ہتھیار تیار کررہا ہے جب کہ ایران کا کہنا ہے کہ اس کا جوہری پروگرام پرامن مقاصد کے لیے ہے۔

XS
SM
MD
LG