رسائی کے لنکس

logo-print

ایران جوہری مذاکرات کا اگلا دور ماسکو میں


ایران کے ساتھ اس کے متنازع جوہری پروگرام پر چھ عالمی قوتوں کے دو روزہ مذاکرات میں جمعرات کو دونوں فریق اگلے ماہ ماسکو میں مذاکرات کے ایک اور مرحلے میں شرکت پر متفق ہوگئے ہیں۔

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ کیتھرین ایشٹن نے یہ اعلان دو روزہ مذاکرات کے اختتام پر کیا۔ انہوں نے کہا کہ اگرچہ کچھ امورپر اختلافات برقرار ہیں لیکن بعض معاملات پر آگے بڑھنے میں میں کامیابی ہوئی ہے۔

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کی سربراہ نے کہا کہ مذاکرات کا اگلادور 18 اور 19 جون کو ماسکو میں ہوگا۔

انہوں نے ایران کے مذاکرات اعلیٰ سعید جلیلی کے ساتھ جمعرات کی صبح دو طرفہ ملاقات کی تھی۔

اس وقت مسئلہ ایران کی جانب سے یورینیم کی 20 فی صد کی سطح تک افزودگی کا ہے۔

مغربی طاقتیں یہ چاہتی ہیں کہ ایران یورینیم کی افزودگی کا عمل روک دے کیونکہ انہیں خدشہ ہے کہ 20 فی صد کی سطح پر افزودگی کے بعد وہ جلد ہی 90 فی صد افزودگی حاصل کرنے میں کامیابی حاصل کرسکتا ہے ۔ یہ وہ سطح ہے جو جوہری ہتھیاروں کی تیاری کے لیے درکار ہوتی ہے۔

ایران جوہری ہتھیاروں کی تیاری کے الزامات کی تردید کرتا ہے اور اس کا کہناہے کہ اس کا جوہری پروگرام توانائی کے حصول اور طبی تحقیق کے لیے ہے۔

ایران چاہتا ہے کہ اس تنازع پر کسی اتفاق رائے کے بدلے میں اس پر عائد بین الاقوامی پابندیاں نرم کر دی جائیں۔

XS
SM
MD
LG