رسائی کے لنکس

logo-print

عراقی افواج نے رمادی کے بعض حصوں کا قبضہ چھڑا لیا


فائل

امریکی فضائی حملوں کی مدد سے عراقی افواج نے شہر کو واپس لینے کے لئے جارحانہ حملے سے پہلے اطراف سے گھیرنے اور اس کی سپلائی لائن معطل کرنے پر توجہ دی جارہی تھی

عراقی افواج نے گزشتہ ایک برس سے داعش کے زیر تسلط شہر رمادی کے بعض حصوں کا قبضہ واپس لے لیا ہے۔

بغداد میں منگل کو جاری ہونے والے سرکاری اعلامیہ میں اس بات کا اعلان کرتے ہوئے بتایا گیا ہے رمادی میں التمیم کے علاقے کی واپسی بغداد کی حامی افواج کے لئے بڑی کامیابی ہے، جو کئی ماہ سے داعش کے مسلح جنگجوں کے خلاف لڑائی جاری رکھے ہوئے ہے۔

امریکی فضائی حملوں کی پشت پناہی میں عراقی افواج شہر کو واپس لینے کے لئے جارحانہ حملے سے پہلے اطراف سے گھیرنے اور اس کی سپلائی معطل کرنے پر توجہ دے رہی تھیں۔

گزشتہ ماہ عراقی حکام نے فلسطین پل واپس لینے کا اعلان کیا تھا جو کہ دریائے فرات پر واقع ہے اور رمادی شہر کو انتہا پسندوں کے زیر قبضہ دیگر علاقوں سے ملاتا ہے۔

سرکاری افواج داعش کے لڑاکوں کو، جنھوں نے عراق اور شام کے بڑے حصے پر قبضہ جمایا ہوا ہے، جڑ سے اکھاڑ پھیکنے کے لئے جدوجہد کر رہی ہیں۔

داعش کے جنگجوؤں نے امبر صوبے کے دارلحکومت رمادی پر گزشتہ برس مئی میں قبضہ کیا تھا، جو کہ عراقی حکومت کے لئے بہت بڑا دھچکا تھا۔

XS
SM
MD
LG