رسائی کے لنکس

logo-print

شام کے معاملے پر اسرائیل اور روس کی بات چیت


روس کے صدر پوٹن اور اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو

دونوں رہنماؤں کے درمیان بات چیت شام کے معاملے پر ایک بین الاقوامی امن کانفرنس منعقد کرنے کوششوں کا حصہ ہے جو روس اور امریکہ نے تجویز کی تھی۔

اسرائیل کے وزیراعظم بینجمن نیتن یاہو نے کہا ہے کہ ان کا ملک روس کے ساتھ مل کر مشرق وسطیٰ میں سلامتی اور استحکام کے لیے کام کرسکتا ہے۔

یہ بات انھوں نے منگل کو روس کے شہر سوچی میں کہی جہاں صدر ولادیمر پوٹن سے ہونے والی ملاقات میں شام کی صورتحال مرکز نگاہ ہوگی۔

اسرائیل اور مغربی قوتیں روس کی طرف سے شام کو جدید طیارہ شکن اسلحہ کی فروخت پر تحفظات کا اظہار کرتی آئی ہیں کیونکہ اس سے صدر بشار الاسد کی فوجوں کے خلاف کسی بھی ممکنہ فضائی کارروائی میں پیچیدگیاں ہوسکتی ہیں۔

روس کے وزیر خارجہ سرگئی لاوروف گزشتہ ہفتے یہ کہہ چکے ہیں ان کی حکومت پہلے سے موجود معاہدے کے تحت شام کو اسلحہ کی فروخت کا عمل مکمل کررہی ہے۔ لیکن انھوں نے یہ نہیں بتایا کہ اس میں جدید ایس۔300 میزائل بیٹریز بھی شامل ہیں یا نہیں۔

دونوں رہنماؤں کے درمیان بات چیت شام کے معاملے پر ایک بین الاقوامی امن کانفرنس منعقد کرنے کوششوں کا حصہ ہے جو روس اور امریکہ نے تجویز کی تھی۔
XS
SM
MD
LG