رسائی کے لنکس

logo-print

عالمی جوہری ادارے کا جاپانی جوہری بجلی گھر کی رپورٹ پر عدم اطمینان


عالمی جوہری ادارے کا جاپانی جوہری بجلی گھر کی رپورٹ پر عدم اطمینان

جاپان کے سرکاری ٹیلی ویژن نے اپنے ایک نشریے میں کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے جوہری امور سے متعلق ادارے نے فوکوشمیا جوہری بجلی گھر پر سرکاری رپورٹ پر تنقید کرتے ہوئے حکومت سے شفاف رپورٹ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

این ایچ کے ٹیلی ویژن نے جمعرات کی اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ جاپان نے یہ رپورٹ 20 جون کو جنیوا میں منقعد ہونے والے بین الاقوامی جوہری توانائی کے ادارے کے اجلاس کے لیے تیار کی تھی۔

آئی اے ای اے کے ماہرین کی ایک ٹیم نے حال ہی میں جوہری بجلی گھر کے حادثے کا جائزہ لینے کے لیے جاپان کا دورہ کیاتھا۔ توقع ہے کہ مذکورہ ٹیم اپنی رپورٹ اس کانفرنس میں پیش کرے گی۔

ٹیلی ویژن کے نشرے میں کہاگیا ہے کہ رپورٹ میں جاپان سے جوہری بحران پر مبنی برحقیقت رپورٹ تیار کرنے اور اسے دوسروں کے ساتھ شیئر کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے ، تاکہ دنیا اس حادثے سے کچھ سیکھ سکے۔

جاپانی حکومت اور جوہری پلانٹ کے منتظمین کو اس حادثے کے بارے میں کم تر سنجیدگی اور سست روی کے مظاہرہ کرنے پر شدید تنقید کا سامنا رہاہے ۔

یہ حادثہ 11 مارچ کو سمندری طوفان سونامی کے بعد جوہری بجلی گھر کو ٹھنڈا رکھنے والے نظام کی خرابی کے نتیجے میں رونما ہواتھا۔

حالیہ دنوں میں ٹوکیو الیکٹرک پاور کمپنی نے یہ تسلیم کیا تھا کہ بظاہر یہ محسوس ہوتا ہے کہ پلانٹ میں واقع تین ری ایکٹروں میں جوہری ایندھن پگھل چکاہے ۔

XS
SM
MD
LG