رسائی کے لنکس

logo-print

شمالی وزیرستان کے متاثرہ تاجروں اور دکانداروں کے ازالے کی یقین دہانی


میران شاہ میں جرگہ

شمالی وزیرستان سے تعلق رکھنے والے تاجروں اور دکانداروں کا حکام کے ساتھ اتوار کے روز پولیٹیکل ایجنٹ کے دفتر میں ایک جرگہ ہوا جس میں شمالی وزیرستان کے تقریباً 30 دکانداروں کے علاوہ فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور ،ایڈیشنل چیف سیکرٹری فاٹا اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

متاثرہ دکانداروں کے نقصانات کے تخمینے کیلئے دو کمیٹیاں پولیٹیکل ایجنٹ شمالی وزیرستان کی سربراہی میں تشکیل دی گئیں۔ کمیٹی میں متاثرہ دکانداروں کے نمائندے شامل ہونگے۔ جرگے کے اختتام پر شمالی وزیرستان کے تاجروں کی تنظیم کے سربراہ اجمل بلوچ نے انتظامیہ اور ریاستی اداروں پر اعتماد کا اظہار کیا۔

جرگے میں فیصلہ کیا گیا کہ متاثرہ دکانداروں کے ازالے تک کمیٹی کا اجلاس ہفتہ وار بنیادوں پر منعقد ہوگا۔ کچھ روز قبل شمالی وزیرستان کے متاثرہ تاجروں اور دکانداروں نے اسلام آباد میں ایک احتجاجی دہرنا دیا تھا ۔ مظاہرین نے احتجاج اعلیٰ حکام بالخصوص چیف آف آرمی سٹاف کی یقین دہانی پر ختم کیا تھا۔

15 جون 2014 کو عسکریت پسندوں کے خلاف اپریشن کے دوران شمالی وزیرستان کے دواہم قصبوں میران شاہ اور میر علی میں ہزاروں کی تعداد میں دکانیں اور مارکیٹیں مسمار ہوئی تھیں۔ بعد میں حکام نے وہاں پر جدید طرز کی مارکیٹ اور بازار تعمیر کئے۔ متاثرہ دکانداروں کا مطالبہ ہے کہ تعمیر شدہ مارکیٹوں اور بازاروں میں ان کو دکانیں الاٹ کی جائیں۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG