رسائی کے لنکس

logo-print

تاجر کے قتل کے خلاف کراچی میں ہڑتال


کراچی میں ہڑتال کا ایک منظر

پاکستان کے اقتصادی مرکز کراچی میں متحدہ قومی موومنٹ کے سابق رکن صوبائی اسمبلی کے بھائی کے قتل اور بھتہ خوری کے بڑھتے ہوئے واقعات کے خلاف بدھ کی صبح ہڑتال کی گئی، لیکن چند گھنٹوں بعد ہی کاروباری مراکز کھولنے کا اعلان کر دیا گیا۔

ہڑتال کے دوران شہر میں بیشتر تجارتی مراکز بند اور سڑکوں پر ٹریفک بھی معمول سے بہت کم رہی۔

متحدہ قومی موومنٹ ’ایم کیو ایم‘ کے سابق رکن صوبائی اسمبلی شاکر علی کے بھائی کرار علی کو منگل کو شیر شاہ مارکیٹ میں نا معلوم مسلح افراد نے گولیاں مار کر ہلاک کر دیا تھا۔ کرار علی کی شیر شاہ مارکیٹ میں دکان تھی۔

ان کی ہلاکت کے خلاف کراچی میں تاجروں کی تنظیم نے احتجاجاً کاروبار بند رکھنے کی کال دی تھی۔

متحدہ قومی موومنٹ اور ٹرانسپورٹروں کی تنظمیں نے آل کراچی تاجر اتحاد کی جانب سے ہڑتال کی اس اپیل کی حمایت کا اعلان کیا تھا۔

XS
SM
MD
LG