رسائی کے لنکس

logo-print

امریکہ کے دو بڑے بینک قرض نادہندگان کی مکانوں کی قرقی کا عمل دوبارہ شروع کررہے ہیں، جسے کاغذی کارروائی سے متعلق خدشات کی بنا پر کچھ عرصے کے لیے روک دیا گیاتھا۔

نجی شعبے سے تعلق رکھنے والے بینک آف امریکہ کا کہنا ہے کہ وہ تقریباً ان ایک لاکھ مکانوں کی قرقی کا عمل دوبارہ شروع کررہاہے جن کے مالکان طویل عرصے سے اپنے مکانوں کے قرضے کی قسطیں نہیں دے رہے۔

اسی طرح ایک اور بینک جی ایم اے سی بھی نامعلوم تعداد میں مکانوں کی قرقی دوبارہ شروع کررہاہے۔

بینک کے عہدے داروں کا کہنا ہے کہ وہ کارروائی سے متعلق اپنے طریقہ کار کا جائزہ مکمل کرچکے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ اب ان کی دستاویزات درست اور صحیح ہیں۔

امریکہ کی تمام 50 امریکی ریاستوں کے عہدے دار ان الزامات کی تحقیقات کررہے ہیں کہ مکانوں کا قرضہ دینے والی کچھ کمپنیوں نے مشکلات میں مبتلا مالکان کو اپنے گھروں سے نکالنے کے لیے ادھوری اور نامکمل دستاویزات سے کام لیا۔

مکانوں کی قرقی پر خدشات بینک آف امریکہ کی جانب سے اگست اور ستمبر کے مہینوں میں سات ارب 30 کروڑ ڈالر خسارے کی خبر کے بعد سامنے آئے ہیں۔

بینک کے عہدے دار صارفین کے کھاتوں اور کریڈ کارڈوں کے نئے قوانین کو اس خسارے کا سبب قرار دیتے ہیں۔

XS
SM
MD
LG