رسائی کے لنکس

مالی میں عسکریت پسندوں کا حملہ، 10 فوجی لاپتا


مالی کے ایک اسلام پسند عسکری گروپ انصار دین کے جنگجو اپنے علاقے کی نگرانی کررہے ہیں۔ فائل فوٹو

افریقی ملک مالی کے شمالی صحرائی علاقے میں اسلامی عسکریت پسندوں کے اچانک حملے کے بعد 10 فوجی لاپتا ہو گئے ۔

فوج نے پیر کے روز بتایا کہ یہ حملہ گاؤ اور مناکو قصبوں کے درمیان اتوار کے روزاس وقت گھات لگا کر کیا گیا، جب فوجیوں کا قافلہ وہاں سے گذر رہا تھا۔

فوج کے ترجمان کرنل ڈیارن کونی نے کہا ہے کہ علاقے میں عسکریت پسندوں کے خطرے میں اضافہ ہو رہا ہے خاص طور پر القاعدہ کی جانب سے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم پر گھات لگا کر حملہ کیا گیا۔ ہمارے تقریباً 10 فوجی لاپتا ہو گئے اور ہماری چار گاڑیاں تباہ ہوئیں۔

عسکریت پسند گروپوں نے مالی کے شمالی علاقے میں سن 2012 پر قبضہ کر لیا تھا جنہیں فرانسیسی فورسز نے ایک سال کے بعد وہاں سے نکال دیا۔ لیکن اس دور افتادہ صحرائی علاقے میں امن قائم رکھنا مشکل ثابت ہوا اور جہادیوں نے مالی کے فوجیوں اور اقوام متحدہ کے امن کاروں پر اپنے حملے جاری رکھے۔

کئی افریقی ملکوں پر مشتمل فورس نے اس حملے ساحل کے علاقے میں اسلامی عسکریت پسندوں کے خلاف کامیابی حاصل کی ہیں جب کہ وہ مالی کے شمالی حصوں اور ہمسایہ ملکوں میں تشدد کی کارروائیاں رکھے ہوئے ہیں۔

القاعدہ سے منسلک عسکریت پسند گروپس نے پچھلے مہینے ملک کے جنوبی حصے میں، جسے نسبتاً پرامن علاقہ تصور کیا جاتا ہےصدر مقام بماکو کے قریب واقع ایک تفریحی مقام پر 5 افراد کو ہلاک کر دیا تھا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG