رسائی کے لنکس

logo-print

پاکستان نے نیوزی لینڈ کو 6 وکٹوں سے ہرا دیا


نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے میچ جیتنے کیلئے پاکستان کو 238 رنز کا ہدف دیا تھا جو اس نے مقررہ اوورز سے 5 بالز پہلے حاصل کر لیا۔

پاکستان نے ورلڈ کپ 2019 میں اب تک ناقابل شکست رہنے والی ٹیم نیوزی لینڈ کو 6 وکٹوں سے ہرا دیا۔ نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے میچ جیتنے کیلئے پاکستان کو 238 رنز کا ہدف دیا تھا جو اس نے پچاسویں اوور کی پہلی گیند پر حاصل کر لیا۔

میچ کا سہرا حارث سہیل اور بابر اعظم کے سر ہے۔ بابر اعظم نے ناقابل شکست 101 رنز بنائے جبکہ حارث سہیل 68 رنز بنانے میں کامیاب رہے۔ ادھر نیوزی لینڈ کی اننگز میں شاہین شاہ آفریدی نے شاندار باؤلنگ کی ۔

نیوزی لینڈ 11 پوائنٹس کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے کیوںکہ آسٹریلیا نے گزشتہ روز میچ جیت کر سب سے پہلے کوارٹر فائنل کے لئے کوالیفائی کیا تھا اور اس کے 12 پوائنٹس ہیں۔

نیوزی لینڈ کے ایونٹ میں اب صرف دو میچز بچے ہیں جن میں سے ایک آسٹریلیا اور دوسرا انگلینڈ سے ہوگا۔ ادھر پاکستان اب 7 پوائنٹس کے ساتھ 7ویں نمبر آگیا ہے۔

پاکستانی اننگز :
اس سے قبل اننگز کا آغاز امام الحق اور فخر زمان نے کیا تاہم 19 رنز پر ہی پاکستان کی پہلی وکٹ گر گئی۔ فخر زمان 9 رنز بناکر بولٹ کی بال پر گپٹل کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوگئے۔

امام الحق بابر اعظم کے ساتھ ملکر پریشر ختم کرتے ہوئے دھیرے دھیرے اسکور کو 44 رنز تک لے گئے لیکن تبھی فرگوسن نے 19 رنر پر ان کی وکٹ اچک لی۔

ان کی جگہ آنے والے نئے بیٹسمین محمد حفیظ تھے۔ حفیظ ٹیم کے سینئر ترین کھلاڑیوں میں سے ایک ہیں انہوں نے 32 رنز بنائے تھے کہ ولیم سن ان کی وکٹ لے اڑے۔

بابر اعظم کا ساتھ دینے کے لئے کریز پر آنے والے اگلے بیٹسمین تھے حارث سہیل جبکہ اس دوران بابر اعظم 67 بالوں پر نصف سنچری بنانے میں کامیاب ہوگئے تھے۔

حارث سہیل اور بابر اعظم، دونوں نے اسکور میں مسلسل اضافہ کیا اور جو وکٹیں ایک کے بعد گر رہی تھیں انہیں بھی یہ روکنے میں کامیاب رہے۔

اس دوران حارث سہیل نصف سنچری اور بابر اعظم سنچری بنانے میں کامیاب ہوگئے تاہم حارث سہیل 49 ویں اوور میں رن آؤٹ ہوگئے۔ انہیں گپٹل نے رن آؤٹ کیا۔ بابر اعظم 101 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔

حارث سہیل کے آؤٹ ہونے کے بعد سرفراز احمد کھیلنے آئے تھے جنہوں نے 5 رنز بنائے اور وہ بھی ناٹ آؤٹ رہے۔

میچ جیتنے کے لئے پاکستان کو 238 رنز کا ہدف: اس سے قبل نیوزی لینڈ کی باری میں اس کے ابتدائی 5 بیٹسمین کوئی بڑا کمال نہ کرسکے اور 83 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔ اس موقع پر لگتا تھا کہ نیوزی لینڈ کی بقیہ آدھی ٹیم بھی شاید جلد آؤٹ ہوجائے لیکن نیشام کے 97 اور کولن ڈی گرینڈہوم کے 64 رنز نے ایسا نہ ہونے دیا۔

تیسرے بڑے اسکورر ولیم سن رہے جنہوں نے 41 رنز بنائے جبکہ باقی کھلاڑی خاطر خواہ اسکور کرنے میں ناکام رہے۔

نیوزی لینڈ کی جانب سے مارٹن گپٹل اور منزو نے اننگز کا آغاز کیا تاہم محمد عامر نے پہلے اوور کی پانچویں بال پر ہی گپٹل کو صرف پانچ رنز پر شکار کرلیا۔ عامر نے انہیں کلین بولڈ کیا۔ ان کی جگہ ولیم سن بیٹنگ کرنے آئے۔

ساتویں اوور میں شاہین شاہ آفریدی نے 12 رنز پر منرو کو آؤٹ کردیا۔ اس وقت ٹیم کا مجموعی اسکور 24 رنز تھا۔

منرو کے بعد راس ٹیلر بھی زیادہ دیر کریز پر نہ ٹک پائے اور شاہین شاہ آفریدی نے انہیں 3 رنز پر سرفراز احمد کے ہاتھوں کیچ کرادیا۔

لیتھم کے ساتھ بھی شاہین شاہ آفریدی نے یہی کیا۔ سرفراز احمد لیتھم کا کیچ لیتے ہوئے ذرا بھی نہیں چوکے اور یوں نیوزی لینڈ کی چوتھی وکٹ 50 رنز سے بھی پہلے آؤٹ ہوگئی۔ لیتھم ایک رنز بناسکے۔

پاکستان کو 100 رنز سے پہلے ہی ایک اور بڑی کامیاب مل گئی۔ شاداب خان نے ولیم سن کو 41 رنز پر آؤٹ کردیا۔ نیوزی لینڈ کی بیٹنگ لڑکھڑا چکی تھی اور اب تک آدھی ٹیم آؤٹ ہوکر پویلین لوٹ چکی تھی۔

اسکور کی گرتی ہوئی پوزیشن کو نیشام اور کولن ڈی گرینڈہوم نے سہارا دیا۔ نیشام نے 77 بالوں پر 50 رنز مکمل کئے۔ ادھر کولن بھی نصف سنچری بنانے میں کامیاب رہے جبکہ دونوں نے 111 رنز پر 100 کی پارٹنر شپ بھی کی۔

کولن 64 رنز پر کھیل رہے تھے کہ جلدی جلدی اسکور کرنے کی کوشش میں سرفراز احمد نے انہیں رن آؤٹ کردیا۔ ان کی جگہ سنٹنر بیٹنگ کرنے آئے۔

یوں نیوزی لینڈ نے مقررہ 50 اوورز میں 6 وکٹ کے نقصان پر 237 رنز بنائے۔ نیشام 97 اور سنٹنر 5 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔

ٹیم پوزیشن:

پاکستان کو سیمی فائنل میں پہنچنے کے لئے اس میچ سمیت تین میچز جیتنا لازمی ہیں، لہذا یہ میچ اس کے لئے انتہائی اہم ہے۔

نیوزی لینڈ اب تک کسی ٹیم سے نہیں ہاری۔ اس نے چھ میں سے پانچ میچ جیتے ہیں جبکہ ایک میچ بارش کی نذر ہوگیا تھا۔

دوسری جانب پاکستان ، انگلینڈ اور جنوبی افریقہ سے میچز میں کامیاب رہا ہے جبکہ بھارت، آسٹریلیا اور ویسٹ انڈیز سے اسے شکست کا منہ دیکھنا پڑا البتہ سری لنکا سے ہونے والا میچ بارش کی نذر ہوگیا۔

نیوزی لینڈ:
مارٹن گپٹل، کولن منرو، کین ولیم سن،راس ٹیلر، ٹام لیتھم، جیمز نیشام، کولن ڈی گرینڈہوم، مچل سنٹنر، میٹ ہینری، لیکی فرگوسن اور ٹرینٹ بولٹ۔

پاکستان:
امام الحق، فخر زمان، بابر اعظم، محمد حفیظ، سرفراز احمد، حارث سہیل، عماد وسیم، وہاب ریاض، شاداب خان،محمد عامر اور شاہین شاہ آفریدی۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG