رسائی کے لنکس

logo-print

میکسیکو دھماکا گیس بھر جانے کا نتیجہ


اٹارنی جنرل جیسس موریلو کارام صحافیوں کو تحقیقات کے نتائچ سے آگاہ کر رہے ہیں

اٹارنی جنرل نے بتایا کہ پیمیکس کمپنی کی عمارت کے تہہ خانے میں میتھین گیس جمع ہوگئی تھی اور بجلی کی تاروں میں خرابی سے پیدا ہونے والی چنگاری سے اس میں دھماکا ہوگیا۔

میکسیکو کی سرکاری آئل کمپنی میں گزشتہ ہفتے ہونے والا دھماکا گیس بھر جانے سے ہوا تھا۔ یہ بات اٹارنی جنرل جیسس موریلو کارام نے تحقیقات کے نتائج سے صحافیوں کو آگاہ کرتے ہوئے بتائی۔

انھوں نے بتایا کہ پیمیکس کمپنی کی عمارت کے تہہ خانے میں میتھین گیس جمع ہوگئی تھی اور بجلی کی تاروں میں خرابی سے پیدا ہونے والی چنگاری سے اس میں دھماکا ہو گیا۔

گزشتہ جمعہ کو ہونے والے اس دھماکے سے عمارت کے متعدد حصے منہدم ہوگئے تھے اور اس میں کم ازکم 37 افراد ہلاک ہو گئے۔

موریلو کا کہنا تھا کہ جائے وقوع سے کسی طرح کے دھماکا خیز مواد کا سراغ نہیں ملا۔

اس واقعے کی تحقیقات ایک بین الاقوامی ٹیم نے کی جس میں میکسیکو، اسپین، برطانیہ اور امریکہ کے ماہرین شامل تھے۔
XS
SM
MD
LG