رسائی کے لنکس

logo-print

دو ہزار سے زائد میکسیکن منشیات فروش گرفتار


امریکہ کے اٹارنی جنرل ایرک ہولڈر کا کہنا ہے کہ منشیات کی سمگلنگ میں ملوث میکسیکو کے شہریوں کے خلاف 22 مہینوں سے جاری ایک مہم کے نتیجے میں ملک بھر سے دو ہزار سے زائد افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔

اُنھوں نے بتایا کہ اِس سلسلے میں صرف بدھ کے روز امریکہ کی 16 ریاستوں سے 400 سے زائد افراد کو گرفتار کیا گیا۔ امریکی اٹارنی جنرل کے بقول ملک میں منشیات کی سمگلنگ میں ملوث میکسیکو کے نیٹ ورکس کے خلاف اس قدر وسیع پیمانے پر اور کامیاب آپریشنزپہلے کبھی نہیں کیے گئے ہیں۔

اُنھوں نے بتایا کہ اِس تحقیقاتی مہم کے دوران حکام نے 15 کروڑ ڈالر ، بڑی تعداد میں اسلحہ اور کئی ٹن منشیات بھی قبضے میں لی ہیں۔

دریں اثناء اٹارنی جنرل ہولڈر نے اس ہفتے سرحدی نگرانی پر مامور محافظوں کی فائرنگ سے میکسیکو کے ایک نوجوان شہری کی ہلاکت پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس واقعہ کی تحقیقات کی جارہی ہیں۔

یہ واقعہ امریکی ریاست ٹیکساس اور میکسیکو کے درمیان سرحد پر پیش آیا اور میکسیکن صدر نے مطالبہ کیا ہے کہ امریکہ اس قتل اور پچھلے مہینے میکسیکو کے ایک اور شہری کی ریاست کیلی فورنیا میں حراست کے دوران ہلاکت کی مفصل تفتیش کرے۔

XS
SM
MD
LG