رسائی کے لنکس

logo-print

ہفتے میں 3 دن چھٹی، سیلز میں 40 فی صد اضافہ


زیادہ کام کرنے سے زیادہ فائدہ ہوتا ہے، یہ بات کہنے کا اب کوئی فائدہ نہیں۔ مائیکروسافٹ نے جاپان میں اپنے ملازمین کو ہر ہفتے ایک اضافی چھٹی دینے کا فیصلہ کیا تو اس کی سیلز ڈرامائی طور پر بڑھ گئی۔

کمپنی نے ایک بیان میں انکشاف کیا ہے کہ اس نے اگست میں ملازمین کو کام اور زندگی میں توازن کے نام پر ہر جمعہ کو چھٹی دی اور ہفتے میں چار دن کام کا اعلان کیا۔ اس کے نتائج حوصلہ افزا تھے۔ کمپنی کی پیداوار، جس کے ماپنے کا معیار سیلز فی ملازم ہے، 40 فی صد بڑھ گئی۔

اس سے پہلے چھوٹی کمپنیاں ہفتے میں چار دن کام کی پالیسی اپنا چکی ہیں۔ لیکن مائیکروسافٹ کی کامیابی سے معلوم ہوتا ہے کہ بڑے ادارے بھی اسے اختیار کر سکتے ہیں۔

مائیکروسافٹ نے نہ صرف ہفتے میں چار دن کام کا فیصلہ کیا بلکہ اپنے ملازمین کو ہدایت کی کہ میٹنگز اور ای میلز کے جواب دینے کے دورانیے کو بھی کم کریں۔ اس میں ہر میٹنگ 30 منٹ میں ختم کرنے کے لیے کہا گیا۔

اگست میں اس آزمائشی اقدام کے بعد جاپان میں مائیکروسافٹ کے 2280 ملازمین میں سے 90 فی صد نے بتایا کہ ان کی زندگی پر خوشگوار اثرات مرتب ہوئے ہیں۔ ایک دن کی اضافی چھٹی سے کمپنی کے اخراجات میں بھی کمی آئی ہے۔

مشرق بعید اور خاص طور پر جاپان میں زیادہ گھنٹے کام کرنے کی روایت ہے جو کبھی کبھی مہلک ثابت ہوتی ہے۔ یہ اتنا بڑا مسئلہ ہے کہ اس کے لیے ایک اصطلاح کاروشی تخلیق کی گئی جس کا مطلب ہے، زیادہ کام کے نتیجے میں لاحق ہونے والی بیماری سے موت!

2015 میں ایک جاپانی تشہیری کمپنی میں بہت زیادہ اوورٹائم کرنے والے ایک ملازم نے کرسمس پر خودکشی کر لی تھی۔ دو سال پہلے بہت زیادہ اوورٹائم کرنے والی ایک جاپانی رپورٹر کا انتقال ہو گیا تھا۔ ان واقعات کے بعد جاپانی کمپنیوں نے ملازمین کی زندگی بہتر بنانے کے لیے سوچ بچار شروع کی۔ مائیکروسافٹ کا حالیہ اقدام ان ہی کوششوں کا حصہ ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG