رسائی کے لنکس

logo-print

نیٹوکے قافلوں سے پاکستانی شاہراہوں کو 10 ارب روپے کا نقصان


نیٹوکے قافلوں سے پاکستانی شاہراہوں کو 10 ارب روپے کا نقصان

وفاقی وزیر مواصلات ارباب عالمگیر نے بتایا ہے کہ پاکستان کے راستے افغانستان میں تعینات نیٹو افواج کے لیے سامان رسد لے جانے والے بڑے اور بھاری ٹرکوں سے ملک کی اہم قومی شاہراہوں کو تین سالوں کے دوران 10 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے ۔

اُنھوں نے بد ھ کو اسلام آباد میں پریس کانفرنس کے دوران اس بارے میں پوچھے گئے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ بلوچستان کے راستے افغانستان جانے والے نیٹو کے سامان رسد کے بڑے ٹرکوں سے انڈس ہائی وے سے چمن تک سڑکوں کا ڈھانچہ زیادہ متاثر ہوا ہے۔

چمن کے راستے افغانستان جانے والے ٹرک (فائل فوٹو)
چمن کے راستے افغانستان جانے والے ٹرک (فائل فوٹو)

وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان نے نیٹو حکام کو ان نقصانات کے بارے میں آگاہ کردیا ہے اور بات چیت کا سلسلہ جاری ہے لیکن فی الحال اس میں کوئی خاطر خواہ کامیابی نہیں ہو سکی ہے۔

افغانستان میں تعینات ڈیڑھ لاکھ غیر ملکی افواج کے لیے لگ بھگ ستر فیصد سامان رسد پاکستان کے چمن اور خیبر ایجنسی کے راستے بھیجا جاتا ہے ۔

XS
SM
MD
LG