رسائی کے لنکس

logo-print

نواز شریف کا آڈیو پیغام، 'خرابیوں کی دیوار کو آخری دھکا دو'


نواز شریف جیل کی سزا کاٹنے کے لیے لندن سے پاکستان کے لیے روانہ ہو رہے ہیں۔ 13 جولائی 2018

ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن صفدر اڈیالہ جیل میں قید ہیں۔

انتخابی مہم ختم ہونے سے چند گھنٹے قبل نوازشریف کا آڈیو پیغام اڈیالہ جیل سے جاری کردیا گیا لیکن یہ بیان ان کی گرفتاری سے قبل ریکارڈ کیا گیا تھا یا جیل میں، اس بارے میں تصدیق نہیں ہو سکی۔

ایون فیلڈ ریفرنس میں اڈیالہ جیل میں قید پاکستان کے سابق وزیر اعظم نوازشریف نےکہا ہے کہ برسوں سے ہماری خرابیوں کی ذمہ دار دیوار کو آخری دھکا دینے کا وقت آ گیا ہے۔

اسی جیل میں قید ان کی صاحبزادی مریم نوازکے سماجی رابطہ کی ویب سائٹ ٹویٹر اکاؤنٹ جاری پیغام میں نوازشریف نے کہا کہ 25 جولائی کا تاریخی دن آن پہنچا ہے اور میں جیل اور اس قید میں آپ سے یہ کہنا چاہتا ہوں کہ برسوں سے ہماری خرابیوں کی ذمہ دار دیوار کو آخری دھکا دینے کا لمحہ آ گیا ہے۔

​نواز شریف نے اپنے پیغام میں کہا کہ کارکن 25 جولائی کو نمازِ فجر کے بعد پختہ ارادے کے ساتھ گھروں سے نکلیں اور اپنے ووٹ کی حرمت کے لئے مسلم لیگ (ن) کو ووٹ دیں، کارکن شیر کے نشان پر مہر لگا کر ملک کی تقدير بدل ڈالیں۔

جیل قوانین کے مطابق کسی بھی قیدی کو جیل میں موبائل فون استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہوتی، مگر یہ بیان مریم نواز کے ٹویٹر اکاؤنٹ سے جاری کیا گیا ہے۔ یہ واضح نہیں ہے کہ وہ اپنا اکاؤنٹ خود چلا رہی ہیں یا اسے کہیں اور سے آپریٹ کیا جا رہا ہے۔

نوازشریف کا یہ پیغام انتخابی مہم ختم ہونے سے چند گھنٹے قبل جاری کیا گیا ہے۔ یہ واضح نہیں ہو سکا کہ یہ بیان ان کی گرفتاری سے قبل ریکارڈ کیا گیا یا بعد میں۔

گورنر خیبر پختون خوا اور گورنر سندھ کی جیل میں نواز شریف سے ملاقات

گورنر خیبر پختونخوا اقبال ظفر جھگڑا اور گورنر سندھ محمد زبیر نے سابق وزیراعظم نوازشریف سے اڈیالہ جیل میں آج ملاقات کی ہے۔ یہ ملاقات دو گھنٹے سے زائد جاری رہی۔ ملاقات نوازشریف کے میڈیکل چیک اپ کے دوران ہوئی ۔ انہوں نے نوازشریف سے مختلف امور پر بات کی اور صحت بھی دریافت کی ۔

ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نوازشریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن صفدر اڈیالہ جیل میں قید ہیں۔

احتساب عدالت نے نوازشریف کو دس سال، مریم نواز کو سات سال جبکہ کیپٹن صفدر کو ایک سال کی قید سزا سنائی ہوئی ہے جبکہ مجرمان کی جانب سے عدالتی فیصلے کو اسلام آّباد ہائی کورٹ میں چیلنج کیا گیا ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG