رسائی کے لنکس

logo-print

مسٹر منڈیلا اپنی عوامی زندگی سے ریٹائر ہونے کے بعد اپنے خاندان کے ساتھ زندگی کے بقیہ ایام ملک کے جنوب مشرق میں واقع اپنے آبائی قصبے قونو میں گذاررہے ہیں

جنوبی افریقہ کے اسکولوں میں زیر تعلیم ایک کروڑ 20 لاکھ سے زیادہ بچوں نے18 جولائی کو نسلی تعصب کے خلاف بین الاقوامی سطح پر ایک علامت کے طور پر شناخت رکھنے والی شخصیت نیلسن منڈیلا کی 94 ویں سالگرہ پر تقریبات میں حصہ لیا اور انہیں اپنی سالگرہ پر مبارک باد پیش کی۔

مسٹر منڈیلا اپنی عوامی زندگی سے ریٹائر ہونے کے بعد اپنے خاندان کے ساتھ زندگی کے بقیہ ایام ملک کے جنوب مشرق میں واقع اپنے آبائی قصبے قونو میں گذاررہے ہیں۔
نیلسن میڈیا کی سالگرہ کی تقریبات کا دائرہ صرف جنوبی افریقہ تک ہی محدود نہیں ہے بلکہ دنیا بھر میں رضاکار اپنے اپنے علاقوں میں 67 منٹ عوامی بھلائی کے کاموں میں صرف کرکے ان سے اپنی عقیدت کا اظہار کررہے ہیں۔

رضاکاروں نے عوامی بھلائی کے لیے اس سال 67 منٹ کا فیصلہ اس لیے کیا ہے کیونکہ مسٹر منڈیا نے اپنی زندگی کے 67 سال عوامی خدمت میں گذارے ہیں۔

مسٹر منڈیلا 1994ء میں جنوبی افریقہ کے پہلے سیاہ فام صدر بنے تھے ، جب کہ اس سے قبل نسلی تعصب پر مبنی حکومت خلاف آواز بلند کرنے کے جرم میں انہیں اپنی زندگی کے 27 سال سلاخوں کے پیچھے گذارنے پڑے تھے۔
XS
SM
MD
LG