رسائی کے لنکس

logo-print

امریکی وزارت خارجہ نے متنازعہ نقشے ہٹا دیے


امریکی وزارت خارجہ نے متنازعہ نقشے ہٹا دیے

بھارت اور پاکستان کی طرف سے احتجاج کے بعد امریکی وزارت خارجہ نے اپنی ویب سائٹ سے دونوں ملکوں کے نقشوں کو یہ اعتراف کرتے ہوئے ہٹا دیا ہے کہ ان میں منقسم کشمیرکی غلط طور پر تصویر کشی کی گئی تھی۔

بھارتی ذرائع ابلاغ کے مطابق نئی دہلی نے ان نقشوں میں جموں و کشمیر کے سارے خطے کو بھارت کا حصہ نہ دیکھانے پر اعتراض کیا تھا جبکہ واشنگٹن میں پاکستانی سفارت خانے نے بھی نقشوں کے ساتھ بہت کم تفصیلات جاری کرنے پر امریکی حکام کے ساتھ یہ معاملہ اُٹھایا تھا۔

پیر کو اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کی ترجمان وکٹوریہ نولینڈ نے ان متنازعہ نقشوں پر سوالات کا جواب دیتے ہوئے اعتراف کیا کہ ان میں غلطیاں ہیں جنھیں دور کردیا جائے گا۔ دونوں ملکوں کے نقشوں میں کشمیر کی متنازعہ علاقے کے طور پر تصویر کشی نہیں کی گئی تھی۔

بھارت اور پاکستان کے درمیان لڑی جانے والی دو جنگوں کی وجہ منقسم کشمیر کا تنازعہ تھا اور دونوں ملک اس خطے کی ملکیت کے دعویدار ہیں۔

XS
SM
MD
LG