رسائی کے لنکس

logo-print

سر کریک تنازع پر پاک بھارت مذاکرات


سر کریک تنازع پر پاک بھارت مذاکرات

پاکستان اور بھارت کے درمیان سر کریک کے دلدلی علاقے میں سرحد کے تعین کے تنازع پر بات چیت کے دو روزہ نئے دور کا آغاز جمعہ کو راولپنڈی میں ہوا۔

مذاکرات میں بھارتی وفد کی قیادت سرویئر جنرل ایس سبھاراؤ جب کہ پاکستان وفد کی سربراہی رئیر ایڈمرل شاہ سہیل مسعود کر رہے ہیں۔

پاکستانی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری ہونے والے ایک مختصر بیان کے مطابق تنازع سرکریک پر بات چیت دونوں ملکوں کے درمیان مارچ میں بحال ہونے والے جامع امن مذاکرات کے عمل کا حصہ ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستان اس مذاکراتی عمل کو خاصی اہمیت دیتا ہے اور وہ بھارت سے تمام معاملات پر بامعنی بات چیت کا خواہاں ہے۔

ماضی میں بھی سرکریک کے مسئلے پر بات چیت کے کئی دور ہو چکے ہیں لیکن ان میں اس تنازعہ کے حل سے متعلق کوئی واضح پیش رفت سامنے نہیں آئی ہے۔

سرکریک کا تقریباً ایک سو کلومیٹر طویل علاقہ بحیرہ عرب کے قریب پاکستان کے جنوبی صوبہ سندھ اور بھارتی ریاست گجرات کے بیچ واقع ہے۔

اس علاقے کا بیشتر حصہ دلدلی یا پھر صحرائی ہے اور سرحدی تنازعے کی وجہ سے یہاں تیل و گیس کی تلاش کا کام ممکن نہیں ہے جب کہ دونوں ممالک کے ماہی گیر بھی اکثر اس علاقے میں متنازع سرحدی حدود کی خلاف ورزی کے الزام میں پکڑے جاتے ہیں۔

XS
SM
MD
LG