رسائی کے لنکس

logo-print

کرم ایجنسی میں شدت پسندوں کے ٹھکانوں پر فوج کی بمباری


نیٹو افواج کی رسد کا ایک بڑا حصہ خیبر ایجنسی کے راستے افغانستان جاتا ہے

افغان سرحد سے ملحقہ پاکستانی قبائلی علاقے کرم ایجنسی میں بدھ کی صبح فوج کے گن شپ ہیلی کاپٹروں نے طالبان کے ٹھکانوں پر بمباری کی ہے جس میں حکام کے مطابق 10 عسکریت پسندوں کو ہلاک اور ان کے دو ٹھکانوں کو تباہ کردیا گیا ہے۔ واقعے میں متعدد عسکریت پسند زخمی بھی ہوئے۔

اس دعوے کی آزاد ذرائع سے تصدیق نہیں ہوسکی ہے۔

دریں اثناء کرم سے ملحقہ قبائلی علاقے خیبر ایجنسی میں نامعلوم مسلح افراد نے نیٹو افواج کے لیے رسد لے جانے والے ٹرکوں پرخودکار ہتھیاروں سے حملہ کرکے ایک ڈرائیور کو ہلاک اور اس کے دو ساتھیوں کو زخمی کردیا۔اطلاعات کے مطابق حملے کے دوران ایک ٹرک بے قابو ہوکر کھائی میں جا گرا۔

افغانستان میں تعینات نیٹو افواج کے لیے کراچی کی بندرگاہ پر پہنچنے والا سامان رسد مختلف شہروں سے گزرتا ہوا افغانستان لے جایا جاتا ہے اور حالیہ مہینوں میں ان قافلوں پرشدت پسندوں کے حملوں میں سینکڑوں ٹرک اور ٹینکر تباہ اور متعدد افراد ہلاک بھی ہوئے ہیں۔

XS
SM
MD
LG