رسائی کے لنکس

logo-print

ایران میں اصلاحات کی حامی خاتون صحافی کو 13 برس قید کی سزا


ہنگامہ شہیدی، روزنامہ 'نگار ایرانی'

ایران کے نیم سرکاری خبر رساں ادارے،' آئی ایس این اے' نے خبر دی ہے کہ انقلابی عدالت نے اصلاح کی حامی ایک خاتون صحافی کو سکیورٹی کے الزامات پر تقریباً 13 برس قید کی سزا سنائی ہے۔

ہفتے کو جاری ہونے والی اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ہنگامہ شہیدی اپنے خلاف 12 برس 9 ماہ قید کی سزا کےفیصلے کے خلاف اپیل کا حق رکھتی ہیں۔ خبر میں مزید وضاحت نہیں کی گئی۔

تینتالیس برس کی شہیدی جون سے جیل میں ہیں، جس سے قبل وہ کچھ عرصے تک سوشل میڈیا پر کافی متحرک رہ چکی ہیں۔

وہ دلیر صحافی ہیں، جو متعدد بار مختصر مدت کی جیل کاٹ چکی ہیں۔

پہلی بار وہ اُس وقت جیل گئی تھیں جب 2009ء کے متنازع صدارتی انتخابات ہوئے، جس میں سخت گیر سابق صدر محمود احمدی نژاد نے دوبارہ انتخاب جیتا تھا۔

اُس وقت سے سلامتی کی وجوہ کی بنا پر ایران میں کئی صحافیوں اور سرگرم کارکنوں کو حراست میں لیا جا چکا ہے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG