رسائی کے لنکس

logo-print

سعودی عرب: شہزادہ مقرن نائب ولی عہد مقرر


ستر سالہ شہزادہ مقرن مملکتِ سعودی عرب کے بانی شاہ عبدالعزیز السعود کے سب سے چھوٹے صاحبزادے ہیں اور گزشتہ ایک برس سے مملکت کے نائب وزیرِاعظم کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔

سعودی عرب کے حکمران شاہ عبداللہ نے ملک کے سابق انٹیلی جنس چیف شہزادہ مقرن بن عبدالعزیز کو نائب ولی عہد مقرر کیا ہے۔

سعودی عرب کے سرکاری ٹیلی ویژن کے مطابق ملک کی شاہی عدالت کی جانب سے جمعرات کو جاری کیے جانے والے ایک اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ شہزادہ مقرن ولی عہد کا عہدہ خالی ہونے پر ولی عہد اور بادشاہ اور ولی عہد کے عہدے بیک وقت خالی ہونے پر ازخود بادشاہ ہوجائیں گے۔

خیال رہے کہ شاہ عبداللہ نے گزشتہ برس اپنی 90 ویں سالگرہ منائی ہے جب کہ ان کے ولی عہد شہزادہ سلمان کی عمر 78 برس ہے۔

ستر سالہ شہزادہ مقرن مملکتِ سعودی عرب کے بانی شاہ عبدالعزیز السعود کے سب سے چھوٹے صاحبزادے ہیں اور گزشتہ ایک برس سے مملکت کے نائب وزیرِاعظم کے فرائض انجام دے رہے ہیں۔

سعودی عرب کی تاریخ میں یہ پہلا موقع ہے کہ نائب ولی عہد کا تقرر کیا گیا ہے۔ سرکاری اعلامیے کے مطابق شہزادہ سلمان اور شاہی خاندان میں نامزدگیوں کی نگران کونسل نے شہزادہ مقرن کو نائب ولی عہد مقرر کرنے کے فیصلے کی توثیق کردی ہے، جس کامطلب ہے کہ شاہ عبداللہ کی وفات کی صورت میں وہ خود بخود شہزادہ سلمان کے ولی عہد بن جائیں گے۔

شہزادہ مقرن برطانیہ کی 'رائل ایئرفورس اکیڈمی' سے فارغ التحصیل ہیں اور سعودی فضائیہ میں بطور پاِئلٹ خدمات انجام دے چکے ہیں۔

وہ سعودی انٹیلی جنس کے سربراہ رہنے کے علاوہ مدینہ اور شمال مغربی صوبے حائل کے گورنر اور شاہ عبداللہ کے خصوصی مشیر بھی رہ چکے ہیں۔
XS
SM
MD
LG