رسائی کے لنکس

logo-print

فضائی اڈے کے کیمپ پر حملہ، ’ہولناک‘، ‘قابل مذمت‘: امریکہ


محکمہٴخارجہ کے ترجمان کے بقول، ’پاکستان نے دہشت گردوں اور پُرتشدد انتہاپسندوں کے ہاتھوں سخت نقصان اٹھایا ہے، اور امریکہ پاکستانی عوام اور اُن تمام لوگوں، جو دہشت گردی سے نبردآزما ہیں، سے یکجہتی کا اظہار کرتا ہے‘

بڈھ بیر کے پاکستان فضائیہ کے اڈے کے مضافات میں ہونے والے حملے کو ’ہولناک‘ اور ’قابلِ مذمت‘ قرار دیتے ہوئے، امریکی محکمہٴخارجہ نے کہا ہے کہ ’دہشت گردوں اور انتہاپسندوں کے ہاتھوں کسی ملک کو اتنا نقصان نہیں پہنچا، جتنا کہ پاکستان نے (اٹھایا ہے)‘۔

جمعے کے روز اخباری بریفنگ کے دوران ایک سوال کے جواب میں، محکمہٴخارجہ کے ترجمان، مارک ٹونر نے کہا ہے کہ امریکہ شدت پسندوں کے خلاف پاکستان کی جانب سے جاری کوششوں کی حمایت کرتا ہے۔ تاہم، ہمیں نہیں معلوم کہ یہ اُنہی کارروائیوں کے جواب میں کیا گیا ہے۔

ترجمان نے کہا کہ ’میرے خیال میں یہ پاکستانی عوام کے بھلے کی جدوجہد ہے، جو جاری ہے‘۔

اُن سے پوچھا گیا تھا کہ کیا دہشت گردی کے حوالے سے صورت حال پاکستان کے ہاتھوں سے باہر نکلتی جار ہی ہے۔

اس سے قبل، بریفنگ کے آغاز پر ایک بیان میں، ترجمان نے کہا کہ بظاہر یہ حملہ اُن افراد کے خلاف تھا جو ایک مسجد میں نماز ادا کر رہے تھے؛ اور خاص طور پر اُن خاندانوں کو ہدف بنانا جو پاکستانی فوجیوں کے اہل خانہ ہیں، قابل مذمت فعل ہے۔

ترجمان نے کہا کہ ہم اس حملے کی شدید مذمت کرتے ہیں اور ہلاک و زخمی افراد کے اہل خانہ اور اقربا سے دل کی گہرائی سے تعزیت کرتے ہیں۔

’پاکستان نے دہشت گردوں اور پُرتشدد انتہاپسندوں کے ہاتھوں سخت نقصان اٹھایا ہے، اور امریکہ پاکستانی عوام اور اُن تمام لوگوں، جو دہشت گردی سے نبردآزما ہیں، سے یکجہتی کا اظہار کرتا ہے‘۔

XS
SM
MD
LG