رسائی کے لنکس

logo-print

دوسرا ٹی 20: آسٹریلیا نے پاکستان کو 7 وکٹ سے ہرا دیا


پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان کینبرا میں کھیلا جانے والا دوسرا ٹی ٹوئنٹی میچ میزبان ٹیم نے 7 وکٹوں سے جیت لیا۔ آسٹریلیا کی کامیابی کے ساتھ ہی اسے سیریز میں ایک صفر کی برتری حاصل ہوگئی ہے۔

پاکستان نے آسٹریلیا کو یہ میچ دیکھنے کے لیے 151 رنز کا ہدف دیا تھا جو اس نے مقررہ 20 اوورز سے 9 بال پہلے ہی صرف 3 وکٹس کے نقصان پرباآسانی حاصل کرلیا۔

آسٹریلوی کھلاڑی اسٹیو اسمتھ 51 گیندوں پرسب سے زیادہ اسکور کرنے میں کامیاب رہے۔ انہوں نے 80 رنز کی اننگز کھیلی اور آخر تک آؤٹ نہیں ہوئے۔

میک ڈرمٹ بھی آؤٹ نہیں ہوئے۔ انہوں نے 21 رنز بنائے جب کہ ڈیوڈ وارنر نے 20 اور فنچ نے 17 رنز بنائے۔

پاکستان بالرز محمد عرفان، محمد عامر اور عماد وسیم نے ایک ایک وکٹ لی۔

اس سے قبل پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 20 اوورز میں 6 کھلاڑیوں کے نقصان پر 150 رنز بناکر آسٹریلیا کو 151 رنز کا ہدف دیا تھا۔

پاکستان کی جانب سے سب سے زیادہ اسکور افتخار احمد نے کیا۔ انہوں نے 5 چوکوں اور 3 چھکوں کے ساتھ 62 رنز بنائے اور آخر تک ناقابل شکست رہے۔

000_1M02YW
000_1M02YW

دوسرا بڑا اسکور بابر اعظم نے کیا۔ انہوں نے 50 رنز بنائے جب کہ وہاب ریاض کوئی رن بنائے بغیر ناٹ آؤٹ رہے۔

پاکستان کی جانب سے آج میدان میں اتاری جانے والی ٹیم میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی بلکہ یہ وہی ٹیم ہے جس نے پہلا ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلا تھا تاہم وہ بارش کی نذر ہوکر بے نتیجہ ختم ہوگیا تھا۔

پاکستان کی اننگز کا آغاز بابر اعظم اور فخرزمان نے کیا اور پہلے اوور میں بغیر کسی نقصان کے 3 رنز بنائے۔ فخر زمان نے 2 اور بابر اعظم ایک رنز پر کھیل رہے تھے۔

بابر زمان: رن پورا کرنے کی کوشش میں
بابر زمان: رن پورا کرنے کی کوشش میں

پاکستان کو پہلا نقصان اس وقت اٹھانا پڑا جب فخر زمان 22 رنز کے مجموعی اسکور صرف 2 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔ انہیں کیومنز کی بال پر ڈیوڈ وارنر نے کیچ کیا۔

فخر زمان کے بعد حارث سہیل کریز پر پہنچے لیکن رچرڈ سن نے انہیں چھ رنز سے زیادہ اسکور کرنے کا موقع نہیں دیا اور انہیں اپنی ہی بال پر کیچ کرلیا۔

یوں اننگز کے آغاز پر ہی آسٹریلوی بالرز کے خلاف گرین شرٹس کی بیٹنگ لائن مشکلات کا شکار ہوتی نظر آئی۔

افتخار احمد جو آج کے میچ کا سب سے بڑا اسکور کرنے میں کامیاب رہے
افتخار احمد جو آج کے میچ کا سب سے بڑا اسکور کرنے میں کامیاب رہے

چوتھے کھلاڑی کے طور پر محمد رضوان کریز پر آئے۔ انہوں نے 16 بالوں پر 14 رنز اسکور کیے ہی تھے کہ ایشٹون اگر نے انہیں کیری کے ہاتھوں کیچ کرادیا۔

ان کے بعد آصف علی بیٹنگ کرنے آئے لیکن اگر نے انہیں بھی صرف 4 رنز پر کیچ کردیا۔ یوں آصف علی کی شکل میں پاکستان کی چوتھی وکٹ گری۔

پانچویں وکٹ بابر اعظم کی گری۔ وہ 50 کے اسکور پر رن آؤٹ ہوئے۔ ان کے بعد افتخار احمد آئے جنہوں نے تیز رفتاری سے رنز بنانا شروع کئے اور پے در پے باونڈریز لگائیں لیکن اس دوران ان کے دوسرے اینڈ پر بیٹنگ کرنے والے عماد وسیم 11 کے اسکور پر رن آؤٹ ہوگئے۔

آسٹریلیا کی جانب سے ایشٹون اگر نے دو اور رچرڈسن اور کیومنز نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

میزبان ٹیم کے کھلاڑی، وکٹ لینے پر خوشی کا اظہار
میزبان ٹیم کے کھلاڑی، وکٹ لینے پر خوشی کا اظہار

واضح رہے کہ پاکستان کو ٹی 20 کی عالمی رینکنگ میں اپنی پوزیشن برقرار رکھنے کے لیے یہ سیریز جیتنا لازمی ہے۔

پاکستانی ٹیم :
بابراعظم، فخر زمان، حارث سہیل، ، محمد رضوان (وکٹ کیپر)، آصف علی، افتخار احمد، عماد وسیم، امام الحق، وہاب ریاض، شاداب خان، محمد عامر، محمد عرفان۔

آسٹریلین ٹیم:
ایرون فنچ، ڈیوڈ وارنر، اسٹیو اسمتھ، بین میک ڈرموٹ، ایشٹون ٹرنر، ایلکس کیری، ایشٹون اگر، پٹ کیومنز، مچل اسٹارک، کین رچرڈسن اور آدم زمپا۔

XS
SM
MD
LG