رسائی کے لنکس

logo-print

مینگورہ میں خودکش حملے میں سات ہلاک


فائل فوٹو

وادی سوات میں گذشتہ تین ماہ کے دوران یہ دوسرا خودکش بم حملہ ہے

پولیس حکام کے مطابق وادی سوات کے مرکزی تجارتی شہر مینگورہ کے مصروف ترین نشاط چوک میں سکیورٹی فورسز کے ایک قافلے پر پیر کی سہ پہرخود کش بم حملے میں کم از کم سات افراد ہلاک جب کہ 25 سے زائد زخمی ہو گئے ہیں ۔

زخمیوں میں سے بعض کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے جس کی باعث ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔ہلاک اور زخمی ہونے والوں میں سکیورٹی اہلکار اور عام شہر ی شامل ہیں ۔

عینی شاہدین نے بتایا ہے کہ دھماکے سے کم ازکم چھ دکانوں اور متعد د گاڑیوں کو نقصان پہنچا ہے ۔ مالاکنڈ ڈویژن کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس محمد ادریس نے جائے وقوع پر صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ خودکش حملہ آور کے زیر استعمال گھڑی اور موبائل فون پولیس کے ہاتھ لگی ہے جن سے اُن کے بقول تحقیقات میں مدد ملے گی ۔

خیال رہے کہ وادی سوات میں گذشتہ تین ماہ کے دوران یہ دوسرا خودکش بم حملہ ہے گذشتہ سال یکم دسمبر کو ہونے والے خودکش حملے کا نشانہ صوبہ سرحد میں برسراقتدار جماعت عوامی نیشنل پارٹی کے رکن صوبائی اسمبلی ڈاکٹر شمشیر علی خان تھے جو اس حملے ہلاک ہو گئے تھے۔

XS
SM
MD
LG