رسائی کے لنکس

ٹیکساس یونیورسٹی میں چاقو سے حملہ، ایک شخص ہلاک


ایک زخمی کو فوری طبی امداد دی جا رہی ہے

ہنگامی امداد کے محکمے کے مطابق جائے وقوع سے اسپتال منتقل کیے گئے تین افراد کو "شدید زخم" آئے جب کہ ایک اور زخمی کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔

امریکی ریاست ٹیکساس کی ایک یونیورسٹی میں چاقو کے حملے میں ایک شخص ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے۔

پیر کو آسٹن میں یونیورسٹی آف ٹیکساس یہ واقعہ پیش آیا اور حملہ آور کی شناخت 21 سالہ طالب علم کینڈریکس جے وائٹ کے نام کی گئی ہے جو پولیس کی تحویل میں ہے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ وائٹ کے پاس ایک شخص کے پاس شکاری چاقو تھا اور جب پولیس اہلکاروں نے اسے خود کو حکام کے حوالے کرنے کا کہا تو اس نے مزاحمت نہیں کی۔

تاحال اس حملے کے محرکات کے بارے میں تفصیل سامنے نہیں آئی ہے۔

ہنگامی امداد کے محکمے کے مطابق جائے وقوع سے اسپتال منتقل کیے گئے تین افراد کو "شدید زخم" آئے جب کہ ایک اور زخمی کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔

یونیورسٹی کی ایک طالبہ ریچل پریشٹ کا کہنا تھا کہ وہ جم کے باہر کھانا لینے کے لیے قطار میں کھڑی تھیں کہ انھوں نے ایک شخص کو بڑا سا چاقو تھامے قطار میں اپنے پیچھے کھڑے شخص کی طرف بڑھتے دیکھا۔

"یہ شخص بالکل میرے قریب کھڑا تھا، حملہ آور نے اسے کندھوں اور دبوچا اور چاقو مار دیا۔ میں وہاں سے جتنا تیز بھاگ سکتی تھی بھاگی۔"

ٹیکساس یونیورسٹی کا شمار امریکی کی بڑی یونیورسٹیوں میں ہوتا ہے۔ یہ واقعپ انتظامیہ کی عمارت اور کلاک ٹاور سے کچھ ہی فاصلے پر ہوا جہاں 1996ء میں فائرنگ کا ایک مہلک واقعہ بھی پیش آیا تھا۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG