رسائی کے لنکس

ٹرمپ کی سویڈن کی امیگریشن پالیسی پر تنقید


فائل فوٹو

اگرچہ ٹرمپ کٓا موقف ہے کہ سویڈن کی طرف سے تارکین وطن کو قبول کرنے کی پالیسی ناکام ہوئی ہے واشنگٹن میں سویڈن کے سفارت خانے نے کہا کہ "ہم امریکہ کی انتظامیہ کو سویڈن کی امیگریشن اور مربوط کرنے کے پالیسوں کے بارے میں بتانے کے منتظر ہیں۔ "

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ کہتے ہوئے کہ "فیک نیوز میڈیا " ( جعلی ذرائع ابلاغ) سویڈن کی امیگریشن پالیسیوں کا دفاع کر رہا ہے، دعویٰ کیا کہ اسکینڈی نیویائی ملک کی بڑے پیمانے پر امیگریشن کی پالیسی ناکام ہوئی ہے۔

ٹرمپ نے پیر کو اپنے ٹوئیڑ پر کہا کہ "عوام کو معاف رکھیں، فیک نیوز میڈیا یہ کہنے کی کوشش کررہا ہے کہ سویڈن میں بڑے پیمانے پر ہونے والی امیگریشن بڑی کامیاب رہی ہے۔ (ایسا) نہیں۔"

ٹرمپ کی طرف سے ہفتے کو بھی یہ بیان سامنے آیا جس میں بظاہر انہوں نے غلطی سے ایک ریلی کے دوران کہا کہ سویڈن میں جمعہ کو ایک دہشت گرد حملہ ہوا ہے۔

ٹرمپ نے ماضی میں یورپ میں ہونے والے دہشت گردوں حملوں کو امیگریشن کے لیے سرحدوں کو کھلا رکھنے سے جوڑتے ہوئے کہا کہ "آپ دیکھ سکتے ہیں کہ جرمنی میں کیا ہورہا ہے ۔ آپ دیکھ سکتے کہ گزشتہ رات اسٹاک ہوم میں کیا ہوا۔ سویڈن (میں)۔ اس پر کون یقین کرسکتا ہے۔ (سویڈن میں) ۔ انہوں نے ایک بڑی تعداد میں (لوگوں) کو آنے دیا۔ اب انہیں ایسے مسائل کا سامنا ہے جن کے بارے میں ان خیال تھا کہ کہ (ایسا ہونا) ممکن نہیں تھا۔"

سویڈن کے سماجی میڈیا پرسویڈن کے شہریوں نے اس بیان کا مذاق اڑایا جس کے بعد ٹرمپ نے کہا کہ انہوں نے یہ یبان فاکس نیوز پر تارکین وطن اور سویڈن سے متعلق نشر ہونے والی ایک خبر کے حوالے سے دیا تھا جسے انہوں نے جمعہ کو دیکھا تھا یہ دہشت گرد حملے کے بارے میں نہیں تھا۔

صحافی ایمی ہاروٹز نے اپنے شو میں کہا تھا کہ سویڈن کے اعلیٰ سطحی عہدیدار جرائم کی شرح میں اضافے کو جان بوجھ کر چھپا رہے ہیں خاص طور پر تشدد اور جنسی زیادتی کے وہ واقعات جن میں مبینہ طور پر سویڈن آنے والے بعض تارکین وطن شامل ہیں۔ سویڈن نے جنگ کے شکار ملکوں سے 2013 کے بعد سے تین لاکھ سے زائد تارکین وطن کو اپنے ہاں قبول کیا تھا۔

دوسری طرف سرکاری اعداد و شمار کے مطابق 2005 کے بعد سے ملک میں جرائم کی شرح میں کمی ہوئی ہے۔

اگرچہ ٹرمپ کا موقف ہے کہ سویڈن کی طرف سے تارکین وطن کو قبول کرنے کی پالیسی ناکام ہوئی ہے، واشنگٹن میں سویڈن کے سفارت خانہ نے اتوار کو کہا کہ " ہم امریکہ کی انتظامیہ کو سویڈن کی امیگریشن اور مربوط کرنے کے پالیسیوں کے بارے میں بتانے کے منتظر ہیں۔ "

ٹرمپ کے اپنے حامیوں کی ریلی کے موقع پر دیے گئے بیان کے بارے میں پہلی بار معلوم ہونے پر سویڈن کی وزیر خارجہ مارگوٹ وال سٹروم نے کہا کہ جمہوریت اور سفارت کاری "ہم سے مطالبہ کرتی ہے کہ ہم سائنس، حقائق اور میڈیا کا احترام کریں۔"

XS
SM
MD
LG