رسائی کے لنکس

امریکی حملہ شمالی کوریا کے لیےبہت ہی بُرا دن ہوگا: ٹرمپ


ٹرمپ نے کہا کہ ’’ممکن ہے ہمیں یہ موقع ملے کہ کسی دوسرے سے مذاکرات کیے جائیں۔ لیکن، ماضی کی انتظامیہ کی طرح، میں اپنی سوچ کا برملا اظہار نہیں کر سکتا۔ لیکن، میں اتنا بتا سکتا ہوں کہ شمالی کوریا کا رویہ درست نہیں، اور اُسے روکنے کی ضرورت ہے‘‘

صدر ڈونالڈ ٹرمپ نے جمعرات کو متنبہ کیا کہ اگر امریکہ شمالی کوریا کے خلاف فوجی کارروائی کرتا ہے تو یہ ’’شمالی کوریا کے لیے بہت ہی بُرا دن ہوگا‘‘۔

صدر نے یہ بات وائٹ ہاؤس کے ایسٹ روم میں منعقدہ اخباری کانفرنس کے دوران کہی۔

نامہ نگاروں کے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے، اُنھوں نے کہا کہ ’’مجھے امید ہے کہ شمالی کوریا کے خلاف (فوجی طاقت) استعمال نہیں کرنا پڑے گی‘‘۔

ٹرمپ نے دو بار پوچھے گئے ایک سوال کا کوئی جواب نہیں دیا آیا یہ بات قابل قبول ہوگی کہ شکست سے ہمکنار ہونے والے شمالی کوریا کو جوہری ہتھیار رکھنے کی اجازت دی جائے گی۔

صدر نے کہا کہ ’’میں آپ سے معاملات طے نہیں کر رہا‘‘۔ اخباری کانفرنس کے دوران کویت کے امیر، شیخ صباح الأحمد الجابر الصباح بھی موجود تھے۔

ٹرمپ نے کہا کہ ’’ممکن ہے ہمیں یہ موقع ملے کہ کسی دوسرے سے مذاکرات کیے جائیں۔ لیکن، ماضی کی انتظامیہ کی طرح، میں اپنی سوچ کا برملا اظہار نہیں کر سکتا۔ لیکن، میں اتنا بتا سکتا ہوں کہ شمالی کوریا کا رویہ درست نہیں، اور اُسے روکنے کی ضرورت ہے‘‘۔

ٹرمپ نے کہا کہ گذشتہ 25 برسوں کے دوران، امریکی انتظامیوں کو اس بات کا تجربہ ہو چلا ہے کہ ’’سمجھوتا طے ہونے کے ایک روز کےاندر، شمالی کوریا میں کوئی نیا کام شروع ہوجاتا ہے، جو جوہری عزائم جاری رکھنے کی نوعیت کا معاملہ ہوتا ہے‘‘۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG