رسائی کے لنکس

logo-print

کرد باغیوں کے حملے میں 26 ترک فوجی ہلاک


کرد باغیوں کے حملے میں 26 ترک فوجی ہلاک

عراق کے قریب ترکی کی سرحد پر کرد باغیوں نے حملہ کرکے 26 ترک فوجیوں کو ہلاک اور 16 کو زخمی کردیا۔ حالیہ برسوں میں یہ اپنی نوعیت کا سب سے زیادہ ہلاکت خیز حملہ تھا۔

ترکی کے حکام کا کہنا ہے کہ کردش ورکرز پارٹی کے باغیوں نے یہ حملہ جنوب مشرقی صوبے میں یوکسیکووا اور چوکورسا کے مضافات میں قائم کیا گیا۔

ذرائع ابلاغ کے مطابق ترکی کی فوج نے کرد باغیوں کی تلاش میں عراقی سرحد میں داخل کر جوابی کارروائی کی اور جنگی جہازوں نے بھی اس میں حصہ لیا۔

ترکی کے صدر عبداللہ گل نے صحافیوں کو بتایا کہ حملوں کے خلاف بھرپور جوابی کارروائی کی گئی۔

رواں ہفتوں میں کردش ورکزر پارٹی کی جانب سے ترکی کے خلاف حملوں میں تیزی آئی ہے جب کہ ترکی کی فوج شمالی عراق میں باغیوں کے مشتبہ ٹھکانوں پر فضائی حملے کررہی ہے۔ رواں سال اگست میں سرحدی علاقوں میں ترکی کے فضائی حملوں کے نتیجے میں 160 کردش باغی مارے گئے۔

کرد باغیوں نے 1984 ء سے ترکی کے جنوب مشرقی علاقے میں خودمختاری کے لیے تحریک چلا رکھی ہے اور اس تنازع میں اب تک 40 ہزار افراد مارے جاچکے ہیں۔

ترکی سمیت امریکہ اور یورپی یونین نے کردش ورکرز پارٹی کو دہشت گرد تنظیم قرار دے رکھا ہے۔

XS
SM
MD
LG