رسائی کے لنکس

logo-print

کمبوڈیا میں جنگی جرائم کی عدالت کا دفاع


بان کی مون کمبوڈیا کے دورے کے موقع پر

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے کمبوڈیا کے وزیر اعظم ہن سین سے کہا ہے کہ مبینہ طور پر جنگی جرائم میں ملوث کمیونسٹ پارٹی کے سابق ارکان کے خلاف قانونی کارروائی کے لیے قائم خصوصی عدالت کو کام جاری رکھنا چاہیئے۔

جمعرات کو فنوم پن کے علاقے میں بدنامِ زمانہ Toul Sleng جیل کا دورہ کرتے ہوئے مسٹر بان کا کہنا تھا کہ کمیونسٹ پارٹی کے ارکان جن کو کھمیر روج بھی کہا جاتا ہے، کو اقتدار سے ہٹائے جانے کے 30 برس بعد بھی ”انسانی مصائب کی چیخ و پکار“ سنائی دیتی ہے۔

Toul Sleng میں 14 ہزار سے زائد افراد کوتشدد کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کیا گیا تھا اور اب اس جیل کو نسل کشی سے متعلق ایک عجائب گھر کا درجہ دے دیا گیا ہے۔

کھمیر روج کے عہدیدار Kaing Guek Eav جو Tuol Sleng کے نگران رہے تھے ، کو جولائی میں اقوام متحدہ کی نگرانی میں کام کرنے والی جنگی جرائم اور انسانیت کے خلاف جرائم کی عدالت نے مجرم قرار دیا تھا۔

لیکن کمبوڈین وزیر اعظم نے مسٹر بان کو بدھ کے روز بتایا تھا کہ کھمیر روج کے چار مزید رہنماؤں کے خلاف مقدمے چلانے کے بعد عدالت کو بند کر دیا جانا چاہیئے۔

XS
SM
MD
LG