رسائی کے لنکس

logo-print

صومالیہ کو خوراک کی شدید قلت کا سامنا


صومالیہ کو خوراک کی شدید قلت کا سامنا

اقوام متحدہ کے ایک عہدے دار نے کہا ہے کہ صومالیہ میں خشک سالی اور کھانے پینے کی چیزوں کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے باعث اسے خوارک کے بحران کا سامناہے۔

اقوام متحدہ کے صومالیہ کے لیے امدادی پروگرام کے کوآرڈی نیٹر مارک بوڈن نے کہاہے کہ صومالیہ میں صورت حال تیزی سے بگڑ رہی ہے اور اگر فوری طورپرمناسب اقدامات نہ کیے گئے تو خوراک کی قلت کے نتیجے میں بہت سی انسانی جانیں ضائع ہوسکتی ہیں۔

بوڈن کا کہنا ہے کہ افریقی ممالک میں خشک سالی کے باعث گذشتہ ایک سال کے دوران وہاں کھانے پینے کی چیزوں میں 270 فی صد تک اضافہ ہوچکاہے۔

اقوام متحدہ کے عہدے دار کا کہناہے کہ انہوں نے صومالیہ کے لیے جس قدر بین الاقوامی امداد کی اپیل کی تھی ابھی تک اس کا صرف 40 فی صد وصول ہوا ہے۔

خوراک کے عالمی پروگرام کے سربراہ کا کہناہے کہ وسائل کی کمیابی کے باعث ان کے ادارے کو صومالیہ اور ایری ٹیریا کے لیے اپنے امدادی پروگرام کا حجم کم کرناپڑا ہے۔

ان کا کہناتھا کہ قرن افریقہ میں بارشوں کی شدید کمی کے نتیجے میں تقریباً ایک کروڑ افراد کو خوراک کی شدید قلت درپیش ہے۔

XS
SM
MD
LG