رسائی کے لنکس

بارزانی کا عہدے سےسبک دوش ہونے کا فیصلہ، قائدانہ صلاحیت کا مظہر: امریکہ


اربیل

امریکی محکمہٴ خارجہ کی خاتون ترجمان ہیدر نوئرٹ نے پیر کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’صدر بارزانی اپنے عوام کے لیے ایک تاریخ ساز شخصیت اور ایک باہمت راہنما ہیں، جب کہ حالیہ دِنوں وہ داعش کا صفایہ کرنے کی مشترکہ لڑائی میں شریک ہیں‘‘

امریکہ نے مسعود بارزانی کی جانب سے عراقی کردستان خطے کے صدر کے عہدے سے دست بردار ہونے کے اعلان کو سراہا ہے۔

امریکی محکمہٴ خارجہ کی خاتون ترجمان ہیدر نوئرٹ نے پیر کو ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’صدر بارزانی اپنے عوام کے لیے ایک تاریخ ساز شخصیت اور ایک باہمت راہنما ہیں، جب کہ حالیہ دِنوں وہ داعش کا صفایہ کرنے کی مشترکہ لڑائی میں شریک ہیں‘‘۔

ترجمان نے کہا کہ ’’یہ فیصلہ ایک مشکل وقت میں قائدانہ صلاحیت کا غماز ہے‘‘۔

بیان میں عراق اور کرد علاقائی حکومت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ ’’عراق کے آئین کے تحت باقی تنازعات کو فوری طور پر حل کرنے کے لیے کام کرنا چاہیئے‘‘۔

عراقی وزیر اعظم حیدر العبادی نے شمالی کردستان علاقے میں تحمل اور قانون کی حرمت کی پاسداری پر زور دیا، جس سے ایک ہی روز قبل بارزانی نے سبک دوش ہونے کا اعلان کیا۔

اُنھوں نے کہا کہ بغداد کی مرکزی حکومت ہر صوبے میں پُرامن صورت حال اور ہر شہری کے مفادات کے تحفظ کی خواہاں ہے۔

عبادی نے کہا کہ وہ کردستان کے خطے کی صورت حال کو قریب سے دیکھ رہی ہے جہاں سیاسی جماعتوں کے صدر دفاتر کے ساتھ ساتھ ’’ذرائع ابلاغ پر حملے ہو رہے ہیں، جب کہ اربیل اور داہو میں افراتفری اور فساد پھیلانے کی کوششیں جاری ہیں‘‘۔

اتوار کے روز بارزانی نے قانون سازوں سے کہا کہ صدر کا عہدہ تحلیل کر دیں، اور اُن کے فرائض کرد وزیر اعظم، پارلیمان اور عدالت کے حوالے کردیں۔

بارزانی کے درجنوں حامیوں نے عمارتوں، قانون سازوں اور صحافیوں پر حملے کیے، جب کہ باہر جمع ہجوم نے اُن کی حمایت میں کرد پرچم لہرائے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG