رسائی کے لنکس

logo-print

مرکزی بینک، معیشت کو براہ راست سہارا دینا بند کردے گا


’فیڈرل رزرو‘ نے بدھ کے روز کہا کہ وہ فروری میں 65 ارب ڈالر کے مساوی سکیورٹی بانڈ خریدے گا، تاکہ معیشت میں زیادہ رقوم ڈالی جاسکیں، روزگار کے مواقع کو فروغ دیا جائے اور سود کی شرح کو کم رکھا جا سکے

امریکی مرکزی بینک کےپالیسی ساز ایک بار پھر دنیا کی سب سے بڑی معیشت کو براہِ راست سہارا دینے کے اقدامات میں کمی لانے کی پالیسی پرعمل پیرا ہیں۔

’فیڈرل رزرو‘ نے بدھ کے روز کہا کہ وہ فروری میں 65 ارب ڈالر کے مساوی سکیورٹی بانڈ خریدے گا، تاکہ معیشت میں زیادہ رقوم ڈالی جاسکیں، روزگار کے مواقع کو فروغ دیا جائے اور سود کی شرح کو کم رکھا جا سکے۔

تاہم، اِس ماہ اثاثوں کی خریداری میں 10 ارب ڈالر کی کٹوتی لائی جائے گی، اور اگر امریکی معیشت کی پیش رفت اِسی طرح جاری رہتی ہے، تو مرکزی بینک کو درست خطوط پر رکھنے کے لیے، اِس سال کے اواخر تک اِس پروگرام کو مکمل طور پر ختم کر دیا جائے ۔

واشنگٹن میں دو روزہ اجلاس کے بعد جاری ہونے والے ایک بیان میں، محکمہٴخزانہ نے کہا ہے کہ اُس کے خیال میں معاشی سرگرمیاں زور پکڑ رہی ہیں، جو، بقول اُس کے،’ وسیع تر معیشت میں مضبوطی کے نمایاں آثار کی غمازی کرتے ہیں‘۔

بینک نے کہا ہے کہ وہ سود کی شرح کو صفر کی حد پر رکھنے کی کوشش کر رہے ہیں، اور اُس وقت تک ایسا کرتے رہیں گے جب تک ملک میں بے روزگاری کی شرح 6.5 فی صد تک نہیں پہنچ جاتی۔

اِس وقت، بے روزگاری 6.7 فی صد کی شرح پر ہے، جو پانچ برس کے عرصےمیں سب سے کم بتائی جاتی ہے۔
XS
SM
MD
LG