رسائی کے لنکس

logo-print

امریکہ اور بھارت میں استعمال شدہ جوہری ایندھن کی ری پراسسنگ کا سمجھوتا


بھارتی جوہری تنصیب

امریکی سفارت کاروں نے کہا ہے کہ انہوں نے جوہری مواد کی ری پراسسنگ کے بارے میں بھارتی عہدے داروں کے ساتھ ایک سمجھوتا طے کر لیا ہے اور اس طرح دونوں ملکوں کے درمیان جوہری توانائى کے ایک اہم معاہدے پر عمل در آمد کی راہ میں حائل ایک بڑی رُکاوٹ دُور ہوگئى ہے۔

امریکی محکمہ خارجہ نے ایک تحریری بیان میں کہا ہے کہ دونوں فریقوں نے استعمال شدہ جوری ایندھن کی ری پراسسنگ کے لیے ” انتظامات اور ضابطہ کار“ کے بارے میں مذاکرات مکمل کرلیے ہیں۔

بھارت میں امریکہ کے سفیر ٹموتھی رومر نے کہا ہے کہ اس سمجھوتے کے نتیجے میں دونوں ملکوں میں ہزاروں لوگوں کے لیے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے۔

امریکی کانگریس نے اکتوبر 2008 ء جوہری تعاون کے سمجھوتے کی توثیق کردی تھی ۔ تاہم بھارتی پارلیمنٹ نے ابھی تک اسے حتمی شکل نہیں دی ہے۔

XS
SM
MD
LG