رسائی کے لنکس

logo-print

امریکہ اور جنوبی کوریا کی مشترکہ جنگی مشقوں کا اعلان


امریکہ اور جنوبی کوریا 25 جولائی سے بڑے پیمانے پر مشترکہ مشقیں شروع کریں گے جن کا مقصدمستقبل میں شمالی کوریا کی طرف سے کسی بھی طرح کی جارحانہ کارروائی کا بروقت جواب دینا ہے ۔

دونوں ممالک کے دفاعی شعبے کے سربراہان نے ایک بیان میں کہا ہے کہ جنوبی کوریا اور امریکہ کی ان مشترکہ فوجی مشقوں کا مقصد شمالی کوریا کو یہ واضح پیغام دینا ہے کہ وہ اپناجارحانہ رویہ ترک کرے اور اس حقیقت کو سمجھے کہ امریکہ اور جنوبی کوریااپنی مشترکہ دفاعی صلاحیت کو بڑھانے کے عزم پر قائم ہیں۔

رواں سال مارچ میں جنوبی کوریا کے ایک بحری جنگی جہاز کے ڈوبنے اور اُس میں 46 افراد کی ہلاکت کی ذمہ داری جنوبی کوریا نے شمالی کوریا پر عائد کی تھی جس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہو گیا ہے۔ شمالی کوریا اس الزام کی تردید کرتا آیا ہے اوراُس نے یہ دھمکی بھی دی ہے کہ اگراُس کے خلاف تادیبی کارروائی کی گئی تو وہ اس کا جواب جنگ کی صورت میں دے گا۔

امریکہ اور جنوبی کوریا کے مابین چار دن تک جاری رہنے والی ان مشقوں میں 20 جنگی بحری جہاز، 200 لڑاکا طیارے اور آٹھ ہزار فوجی حصہ لیں گے۔

XS
SM
MD
LG