رسائی کے لنکس

logo-print

امریکی قانون سازوں کا ایران کے خلاف تعزیرات کومزید سخت کرنے کا اقدام


امریکی کانگریس

اقدام کے تحت کسی بھی شخص کو امریکی ویزا نہیں دیا جائے گا جو کسی طور ایران کےپیٹرول یا گیس کی صنعتوں کے معاملے میں ملوث ہوگا

پچھلے ماہ کے انکشاف کے بعد، جِس میں بتایا گیا تھا کہ ایران نےمبینہ طور پرواشنگٹن میں سعودی سفیر کو قتل کرنے کا منصوبہ بنایا ہے، امریکی کانگریس ایران کے خلاف قدغنوں کو سخت بنانے کا اقدام کر رہی ہے۔

ایوان کی بیرونی امور سے متعلق کمیٹی نے بدھ کو ایک وسیع تر قانون سازی کی منظوری دی ہے جِس کی رو سے ایران کے مالیاتی، پیٹرول اور جوہری مفادات کے حوالے سےلاگو امریکی تعزیرات کو سخت بنایا جائے گا۔

اقدام کے تحت کسی بھی شخص کو امریکی ویزا نہیں دیا جائے گا جو کسی طور ایران کےپیٹرول یا گیس کی صنعتوں کے معاملے میں ملوث ہوگا۔

ساتھ ہی ایک ترمیم زیرِ غور ہے جِس کا مقصد ایران کے مرکزی بینک کو عالمی مالیاتی منڈیوں سے منقطع کرنا ہے۔

اِس قانون سازی کے تحت ایران کی سکیورٹی فورسز کو تنہا کرنے کی کوشش کی جائے گی اور حکومت مخالف مظاہرین کی تنظیمی اورابلاغ کی استعداد کو فروغ دیا جائے گا۔

ایران کسی غیر ملکی کے قتل کی سازش میں ملوث ہونے کےالزام کی تردید کرتا ہے۔

XS
SM
MD
LG