رسائی کے لنکس

logo-print

خراب کولنگ سسٹم کو ٹھیک کرنے کے لیے خلانورد چہل قدمی کریں گے


خلا نورد فلائیٹ انجنیئرز ٹریسی کالڈ ویل اور ڈگ وہیلاک

بین الاقوامی خلائی اسٹیشن پرسوارخلانورد ہفتےکو سات گھنٹے کی چہل قدمی کی تیاری کر رہے ہیں جس کےدوران وہ مدار پر قائم چوکی کو ٹھنڈا رکھنے کے نظام کے ایک پمپ کو تبدیل کریں گے جس نے کام کرناچھوڑ دیا تھا اور جس کے باعث کولنگ سسٹم کو ہنگامی طور پر بند کردیا گیا تھا۔

ناسا نےبتایا ہے کہ خلانورد ڈگ وہیلک اور ٹریسی کاڈویل ڈائی سن کھُلی خلا میں چہل قدمی کریں گے۔ مرمت کے کام کی تکمیل کے بعد پہلی خلائی چہل قدمی ہوگی جب کہ دوسری اگلے بدھ کو ہوگی۔

اِس پمپ کے ذریعے امونیا گیس فراہم کی جاتی ہے جِس سےاسٹیشن کے الیکٹریکل اور فلائیٹ سسٹم کو مناسب درجہٴ حرارت پر رکھنے میں مدد ملتی ہے۔ پمپ کے کام نہ کرنے کے باعث خلائی اسٹیشن کے کولنگ سسٹم کا آدھا حصہ بندہوگیا تھا۔ خلانوردوں نے کچھ آلات کو بند کیا تاکہ اسٹیشن کے اندردرجہٴ حرارت میں کمی لائی جاسکے۔

ناسا کا کہنا ہے کہ ہفتےکوخلانورد ناکارہ ماڈول کو ہٹانے پر توجہ مرکوز کریں گے، جِس کی جگہ فاضل آلہ لگائیں گے۔ دوسری خلائی چہل قدمی کےدوران، وہ اُن لائنوں کو جوڑیں گے جن کے ذریعے امونیا کا سیال مادہ منتقل ہوتا ہے۔

امریکہ کے خلائی ادارے کا کہنا ہے کہ مدار کی چوکی پر سوار تین امریکی اور تین روسی خلانورد وں کو کوئی خطرہ لاحق نہیں ہے۔

XS
SM
MD
LG