رسائی کے لنکس

logo-print

شدید برفانی طوفان کے باعث واشنگٹن میں زندگی مفلوج


شدید برفانی طوفان کے باعث واشنگٹن میں زندگی مفلوج

برفانی طوفان جمعہ کو شروع ہوا اور چوبیس گھنٹوں تک جاری رہا جس کے بعد سردی کی شدت میں غیر معمولی اضافے کے باعث برف کے صفائی کے کام میں مشکلات

شدید برفانی طوفان کے باعث امریکی دارالحکومت واشنگٹن ڈی سی اور گردونواح کی ریاستوں میں زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی ہے۔

مسلسل برف باری کے ساتھ غیرمعمولی تیزہواؤں نے لاکھوں گھروں کو بجلی کی فراہمی کا نظام معطل کر دیا ہے۔ ہوائی اڈے بند اور ریل گاڑیوں کا نظام بری طری متاثر ہوا ہے۔

امریکی حکام نے ریاست ورجینیا اور نیوجرسی میں ہنگامی حالت کا اعلان کر دیا گیا ہے جب کہ لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ سڑکوں پر سفر کرنے سے گریز کریں۔

واشنگٹن میں اب تک تقریباً دو فٹ برف پڑ چکی ہے اور شہر کی تاریخ میں ہونے والی یہ ایک شدید ترین برفباری ہے۔

طوفان جمعہ کو شروع ہوا اور 24 گھنٹوں تک جاری رہا جس کے بعد سردی کی شدت میں غیر معمولی اضافے کے باعث برف کے صفائی کے کام میں مشکلات پیش آرہی ہیں۔

ان حالات میں ہفتے کے روز وائٹ ہاؤس سے روانگی کے وقت صدر باراک اوباما کی گاڑیوں کے قافلے کو بھی معمولی حادثہ پیش آیا۔

دو ماہ کے اندر ان علاقوں میں آنے والا یہ دوسرا بڑا برفانی طوفان ہے۔

امریکہ کی ریاست کیلی فورنیا میں بھی سیلابی بارشوں کے باعث سرکنے والے مٹی اور پہاڑی تودوں نے بعض علاقوں میں گھروں اور گاڑیوں کو نقصان پہنچایا ہے۔

جن علاقوں میں یہ حادثات پیش آئے ہیں وہاں پچھلے سال بڑے پیمانے پر لگنے والی آگ نے جنگلات کو راکھ کر دیا تھا۔

XS
SM
MD
LG