رسائی کے لنکس

فرانس کے سابق صدر جیکس شیراک کی آخری رسومات میں عالمی لیڈروں کی شرکت


آنجہانی جیکس شیراک کی آخری رسومات ادا کی جا رہی ہیں

فرانس کے آنجہانی سابق صدر جیکس شیراک کی آخری رسومات کی تقریب آج پیر کے روز پیرس میں منعقد ہوئی جس میں موجودہ اور سابق عالمی رہنماؤں نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

ان میں فرانس کے صدر امینوئل میکرون، روس کے صدرولادی میر پوٹن، جرمن صدر فرینک والٹر سٹائن میئر، لبنان کے صدر سعد الحریری، برطانوی ملکہ الزبتھ کے سب سے چھوٹے بیٹے شہزادہ ایڈورڈ، یورپین کمشن کے سربراہ یاں کلاڈے جنکر، افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی، قطر کے امیر شیخ تمیم بن حماد الثانی اور امریکہ کے سابق صدر بل کلنٹن شامل تھے۔

فرانس کے صدر میکرون سابق امریکی صدر بل کلنٹن کا استقبال کر رہے ہیں
فرانس کے صدر میکرون سابق امریکی صدر بل کلنٹن کا استقبال کر رہے ہیں

فرانس کے آنجہانی صدر شیراک اپنی غیر معمولی شخصیت اور 2003 میں عراق پر حملے کی مخالفت کے حوالے سے شہرت رکھتے تھے۔ اُن کا انتقال گذشتہ ہفتے 86 برس کی عمر میں ہوا۔

شیراک کا جسد خاکی فرانسیسی پرچم میں لپٹا ہوا تھا اور اسے پیرس کی تمام اہم سڑکوں سے گاڑیوں کے قافلے میں گزارتے ہوئے چرچ پہنچا یا گیا۔ اُن کا آخری دیدار کرنے کے لئے سڑکوں پر ہزاروں لوگ جمع تھے۔

جیکس شیراک 1995 سے 2007 تک فرانس کے صدر رہے۔ اُن کی آخری رسوم میں شرکت کے لئے چرچ میں 2000 کے لگ بھگ لوگ جمع تھے۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پیرس کے آرک بشپ مچل اپتیت نے کہا کہ سابق صدر شیراک عوام سے حقیقی طور پر محبت کرتے تھے اور ملک کے تمام طبقوں میں یکساں طور پر مقبول تھے۔

جیکس شیراک کا تابوت تدفین کیلئے لیجایا جا رہا ہے
جیکس شیراک کا تابوت تدفین کیلئے لیجایا جا رہا ہے

جیکس شیراک کی 86 سالہ اہلیہ برناڈیٹے خرابی صحت کی بنا پر اس تقریب میں شرکت نہ کر سکیں۔ تاہم انہوں نے خاندان کے دیگر افراد کے ہمراہ پیرس کے ایک ہوٹل میں ایک نجی دعائیہ تقریب میں شرکت کی جہاں اختتام ہفتہ اُن کے تابوت کو سرکاری اعزاز کے ساتھ رکھا گیا تھا۔

بعد میں اُن کی تدفین پیرس کے ایک قبرستان میں کر دی گئی۔

تدفین کے بعد فرانس کے صدر میکروں نے غیر ملکی مہمانوں کو ضیافت دی۔ تاہم روس کے صدر پوٹن ضیافت سے قبل ہی واپس وطن روانہ ہو گئے۔

فیس بک فورم

XS
SM
MD
LG