رسائی کے لنکس

logo-print

امریکہ کی جانب سے یمنی حکومت اور باغیوں میں فائر بندی کا خیر مقدم


امریکہ کی جانب سے یمنی حکومت اور باغیوں میں فائر بندی کا خیر مقدم

امریکی وزیر خارجہ ہلری کلنٹن نےیمن کی حکومت اور شیعہ باغیوں کے درمیان فائر بندی کا خیر مقدم کیا ہے اور لڑائی سے بے گھر ہوجانے والوں کے لیے اپنی تشویش کا اظہار کیا ہے۔

پیر کی صبح جاری ہونے والے ایک بیان میں مزکلنٹن نے تمام فرقوں کی نمائندگی کرنے والی ثالثی کمیٹی کے کام اور مصالحتی اور تعمیر نو کے ہنگامی عمل کے آغاز کی نشان دہی کی۔

انہوں نے کہا کہ امریکہ کو انسانی ہمدردی کی صورت حال پر بدستور تشویش ہے اوروہ لگ بھگ ڈھائی لاکھ بے گھر یمنیوں کی مدد کے لیے گذشتہ سال سے اب تک ایک کروڑ 93 لاکھ ڈالر دے چکا ہے۔

انہون نے عطیہ دینے والے دوسرے ملکوں پر بھی زور دیا کہ وہ بین الاقوامی امدادی اداروں کی مدد کریں۔

گزشتہ ہفتے طے پانے والے فائر بندی کے ایک معاہدے کا مقصد یمنی حکومت اور ہوثی باغیوں کے درمیان چھ سال سے جاری لڑائی ختم کرانا ہے۔

پیر کے روز باغیوں نے ان پانچ سعودی فوجیوں میں سے، جن کے بارے میں خیال ہے کہ انہوں نے پکڑ رکھاہے، ایک کو رہا کردیا۔

XS
SM
MD
LG