رسائی کے لنکس

logo-print

آئی سیف کے کمانڈر جنرل میک کرسٹل پاکستان کے دورے پر


جنرل میک کرسٹل

افغانستان میں تعینات نیٹو کی بین الاقوامی سکیورٹی اسسٹنس فورس کے سربراہ جنرل سٹینلی میک کرسٹل جمعے کو پاکستان پہنچے ہیں۔

امریکی سفارتخانے کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان کے مطابق ان کے دورے کا مقصد پاکستان فوج کے سربراہ جنرل اشفاق پرویز کیانی سے ملاقات میں انھیں افغانستان میں جاری آئی سیف کی کارروائیوں کی تازہ ترین صورتحال سے آگاہ اور صلاح ومشورہ کرنا ہے۔

جنرل میک کرسٹل آئی سیف کی سرگرمیوں کے سلسلے میں جنرل کیانی اور پاکستانی رہنماؤں سے مشاورت کے لیے باقاعدگی سے پاکستان کا دورہ کرتے رہتے ہیں۔ آئی سیف اور امریکہ تشدد آمیز انتہا پسندوں کو شکست دینے اور پاکستان اور خطہ میں امن و سلامتی قائم کرنے کے اپنے مشترکہ اہداف کے حصول کے لیے پاکستان سے تعاون اور اشتراک کارجاری رکھے ہوئے ہیں۔

امریکہ اور پاکستان دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قریبی اتحادی ہیں اور دونوں ملکوں کی افواج کے درمیان دوطرفہ پیشہ وارانہ امور پر قریبی تعاون حالیہ برسوں میں مضبوط ہوا ہے۔

دریں اثناء سفارتخانے کی طرف سے جمعے کو جاری ہونے والے ایک اور بیان میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان کی نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی کے 22فوجی افسران رواں ہفتے کے دوران ایک ہفتےکے غیر ملکی مطالعاتی دورے پر امریکہ گئے ہیں تاہم امریکہ اور پاکستان کی افواج کے مابین ابلاغ اور مثبت تعلقات کو فروغ دیا جاسکے۔

یہ تبادلہ پروگرام پاکستان اور امریکہ کے درمیان قریبی تعاون کو بڑھانے کا ایک حصہ ہے جس میں دونوں ممالک کے درمیان امریکی قومی سلامتی کی حکمت عملی اور امریکی شہری وعسکری تعلقات کے فروغ پر خصوصی توجہ دی گئی ہے۔

بیان کے مطابق پاکستانی افسران نے دورہ کے دوران متعدد کلیدی امریکی فوجی وسرکاری اداروں کا دورہ کیا جن میں پینٹاگون، امریکی محکمہ خارجہ اور نیشنل ڈیفنس یونیورسٹی واشنگٹن ڈی سی، ٹیمپا میں یو ایس سنٹرل کمانڈ اینڈ اسپیشل آپریشنز کمانڈ ہیڈکوارٹرز کے علاوہ دیگر امریکی عسکری اداروں کے دفاتر شامل ہیں۔

XS
SM
MD
LG